The news is by your side.

Advertisement

پولیس نے عیسائی عامل کو توہینِ مذہب کے جرم میں گرفتارکرلیا

لاہور: پولیس نے ایک عیسائی عامل کوعملیات کے دوران ایسی تلوار جس پراسلامی آیات کنندہ تھیں، استعمال کرنے پرتوہینِ مذہب کے الزام میں گرفتار کرلیاہے۔

مقامی پولیس افسرامیرمختار کا کہنا ہے نوید جون نامی اس عامل کو سرگودھا کے زرعی ٹاوٗن سے مقامی رہائشیوں کی شکایت پرگرفتار کیا گیا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مقامی افراد نے شکایت کی ہے کہ عیسائی عامل اپنے پاس آنے والوں کا علاج جس تلوار کے ذریعے کرروحانی علاج کرتا ہے اس پر قرآنی آیات کنندہ ہیں جس سے مسلمانوں کے جذبات مجروع ہوتے ہیں۔

نوید نامی ملزم کے خلاف مقدمہ توہینِ مذہب کے قانون کے تحت کیا گیا جس کے مطابق لوگوں کے مذہبی جذبات مجروع کرنے والوں کے خلاف کاروائی کی جاتی ہے۔

دوسری جانب نوید جون کا کہنا ہے کہ اس کے پاس موجود تلوار’مقدس‘ ہے اوراسے مریضوں پرپھیرنے سے مریض صحتیاب ہوجاتے ہیں۔

پولیس نے نوید جون کے خلاف تحقیقات مکمل کرلیں ہیں اور اسے دس برس تک کی سزا ہوسکتی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں