The news is by your side.

Advertisement

پولیس کے ٹارچر سیل سے نوجوان بازیاب، اندھے قتل میں ملوث چار ملزمان گرفتار

پاکپتن / گوجرہ : پولیس کے مبینہ ٹارچر سیل سے زنجیروں میں جکڑا نوجوان بازیاب ہوا ہے جبکہ گوجرہ میں پولیس نے اندھے قتل کیس کے ملزمان کاسراغ لگا کر چار ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکپتن میں پولیس کے مبینہ ٹارچرسیل سے زنجیروں میں جکڑا نوجوان بازیاب ہوا ہے، اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ایچ او سٹی عارف والا نے نوجوان ارسلان کے ورثا کو دھمکیاں بھی دیں۔

ارسلان کے والد زاہد فاروق کا بیان سوشل میڈیا پر وائرل ہوگیا، ارسلان کے والد نے الزام عائد کیا ہے کہ پولیس کیس واپس لینے اور زبردستی صلح کے لئے دباؤ ڈال رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس میرے بیٹے کو بدترین تشدد کا نشانہ بنارہی ہے، وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار واقعےکا فوری نوٹس لے کر انصاف فراہم کریں، اس سلسلے میں آر پی او ساہیوال نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ تھانے کے اہلکار کو کل طلب کرلیا ہے۔

علاوہ ازیں گوجرہ کے علاقے سٹی پولیس اسٹیشن نے اندھے قتل کیس کے ملزمان کا سراغ لگا لیا، پولیس کے مطابق محلہ نا ظم آباد کے فخرامام کو ایک ماہ قبل قتل کیا گیا تھا، ایک لڑکی سے مراسم پر فخرامام کو رشتہ داروں نے قتل کیا تھا، سٹی پولیس نے ٹھوس شواہد کی مدد سے چار ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں