بدھ, مئی 29, 2024
اشتہار

شکارپور سے والد سمیت اغوا ہونے والے پولیس اہلکار کی ویڈیو سامنے آگئی

اشتہار

حیرت انگیز

جیکب آباد: سندھ کے ضلع شکارپور سے 25 روز قبل والد کے ہمراہ ڈاکوؤں کے ہاتھوں اغوا ہونے والے پولیس اہلکار کی ویڈیو سامنے آگئی جس میں اسے دہائی دیتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

ویڈیو میں مغوی فیروز بروہی کہہ رہا ہے کہ 16 پریل کو شکارپور میں رضا محمد پولیس پکٹ سے مجھے والد سمیت اغوا کیا گیا، میں جیل پولیس میں ہوں اور والد اسکول ٹیچر ہیں۔

اہلکار نے کہا کہ والد ماسٹر سہیل بروہی گولی لگنے سے زخمی حالت میں ڈاکوؤں کے پاس ہیں، ان کی حالت کیسی ہے کچھ نہیں بتایا جا رہا۔

- Advertisement -

فیروز بروہی نے کہا کہ 25 روز گزر گئے لیکن کسی نے رہائی کی کوشش نہیں کی، ایم این اے اعجاز جکھرانی، ایم پی اے شیر محمد مغیری و دیگر مجھے بازیاب کروائیں۔

اس سے قبل بھی ڈاکوؤں نے فیروز بروہی اور اس کے والد کی ویڈیو جاری کی تھی جس میں پولیس اہلکار کا کہنا تھا کہ ہم پر تشدد کیا جاتا ہے 13 روز ہوگئے لیکن بازیاب نہیں کروایا جا سکا۔

پولیس اہلکار کا کہنا تھا کہ آئی جی سندھ سے اپیل کرتا ہوں ہمیں بازیاب کروایا جائے۔

مغویوں کے ورثا نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ڈاکوؤں نے مغویوں کی بازیابی کیلیے 70 لاکھ روپے تاوان مانگا ہے۔ پولیس کا کہنا تھا کہ ڈاکوؤں نے پولیس اہلکار فیروز اور اس کے والد کو 13 روز قبل اغوا کیا تھا۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں