The news is by your side.

Advertisement

پیپلز پارٹی نے پہلی مرتبہ خاتون سینیٹر کو قائد حزب اختلاف نامزد کردیا

اسلام آباد : پیپلزپارٹی نے ایک اور تاریخ رقم کردی اور سینیٹ کی تاریخ میں پہلی مرتبہ خاتون سینیٹر کو قائد حزب اختلاف نامزد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے انتخاب کے بعد سیاسی پارٹیاں سینیٹ میں اپنا قائد حزب اختلاف کیلئے لانے میں ہیں۔

پاکستان پیپلزپارٹی نے سینیٹر شیری رحمان کو سینیٹ میں قائد حزب اختلاف نامزد کردیا، جس کی منظوری پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے دیدی۔

پاکستان پیپلزپارٹی نے شیری رحمان کو سینیٹ میں قائد حزب اختلاف کیلئے نامزد کرکے سینیٹ میں ایک اور نئی تاریخ رقم کردی، اس سے پہلے کبھی بھی سینیٹ میں خاتون سینیٹر حزب اختلاف کے عہدے پر نہیں رہی ہے۔

پاکستان پیپلزپارٹی کو یہ بھی اعزاز حاصل ہے کہ انھوں نے بطور وزیر اعظم کیلئے محترمہ بے نظیر بھٹو اور قومی اسمبلی کے اسپیکر کیلئے فہمیدہ مرزا اور ڈپٹی اسپیکر کیلئے اشرف عباسی کو نامزد کیا تھا ۔


مزید پڑھیں : حکومتی اتحاد کو شکست: میرصادق سنجرانی چیئرمین سینیٹ، سلیم مانڈوی والا ڈپٹی چیئرمین منتخب


پیپلزپارٹی نے اپنی یہ روایت برقرار رکھتے ہوئے شیری رحمان کو نئی ذمہ داری دی ہے، نامزد اپوزیشن لیڈر شیری رحمان امریکا میں پاکستان کی سفیر بھی رہ چکی ہیں۔

خیال رہے کہ چیئرمین اور ڈپٹی سینیٹ انتخابات میں حکومتی اتحاد کو شکست سامنا کرنا پڑا اور چیئرمین کی نشست پر اپوزیشن کے مشترکہ امیدوار صادق سنجرانی کامیاب قرار پائے جبکہ ان کے مقابلے میں راجا ظفر الحق 46 ووٹ لے سکے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں