The news is by your side.

Advertisement

امریکا میں پہلی سعودی خاتون سفیر ریما بنت بندر نے ذمہ داریاں سنبھال لیں

واشنگٹن : سعودی سفارت خانے کے ترجمان نے آگاہ کیا کہ پہلی خاتون سفیرریما بنت بندر نے امریکی وزارت خارجہ کو اپنی سفارتی اسناد پیش کر دیں۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کی پہلی خاتون سفیر شہزادی ریما بنت بندر بن سلطان نے امریکا میں مملکت کی سفیر کی حیثیت سے کام کا آغاز کر دیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ واشنگٹن میں سعودی سفارت خانے کے سرکاری ترجمان فہد ناظر نے ایک بیان میں بتایا کہ مقررہ خاتون سفیر نے امریکی وزارت خارجہ کو اپنی سفارتی اسناد پیش کر دی ہیں۔

خاتون سفیر شہزادی ریما نے اپنی ٹویٹ میں کہا کہ میں نے آج سے امریکا میں مملکت کی سفیر کے طور پر کام شروع کر دیا ہے۔ میری دعا ہے کہ اللہ رب العزت مجھے اور میرے ساتھیوں کو اپنے پیارے وطن کی خدمت کی توفیق عطا فرمائے۔

شہزادی ریما بنت بندر بن سلطان 1945 کے بعد سے امریکا میں مقرر ہونے والی سعودی عرب کی 11 ویں سفیر ہیں، وہ اس عہدے پر کام کرنے والی پہلی سعودی خاتون ہیں۔

واضح رہے کہ شہزادی ریما 24 اکتوبر 1983 کو امریکا میں اپنے والد شہزادہ بندر بن سلطان کے ہمراہ واشنگٹن میں سعودی سفارت خانے میں داخل ہوئیں، شہزادی ریما کے والد نے 22 سال تک دونوں ملکوں کے اہم تاریخی ادوار میں سفارت کاری کے فرائض انجام دئیے۔

امریکا میں قیام کے دوران شہزادی ریما نے سفارتی آداب و رموز اپنے والد شہزادہ بندر سلطان سے سیکھے یہی وجہ ہے کہ انہوں نے مختلف شعبہ ہائے زندگی میں کامیابی کے ساتھ خدمات انجام دیں، ان کی جرأت ہمت اور سفارتی رموز سے آگاہی کی بنا پر امریکا جیسے طاقت ور ملک میں انہیں سفیر مقرر کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں