The news is by your side.

Advertisement

عام معافی کا قانون لایا جائے ورنہ پھانسیاں‌ لگائیں گے، لبنانی قیدیوں کا اعلان

بیروت : قیدیوں نے عام معافی کا قانون لانے پر پھانسیاں لگانے کی دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم چور ہیں غربت و افلاس کی وجہ سے لیکن بڑے چوروں کے خلاف کارروائی کب ہوگی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق مشرق میں واقع ملک لبنان میں معمولی جرائم انجام دینے والے قیدیوں نے حکومت کو خودکشی کرنے کی دھمکی دے دی ہے، قیدیو کا مطالبہ ہے کہ ملک میں عام معافی کا قانون متعارف کرایا جائے۔

قیدیوں کا کہنا ہے کہ ہم نے غربت و افلاس کے باعث چوری کی لیکن جو بڑے چور ہیں انہیں کون پکڑے گا، حکومت ایک انڈا چوری کرنے والے کو تو پکڑ رہی ہے لیکن جس نے ملکی خزانہ لوٹ لیا اسے کوئی نہیں پکڑ رہا۔

قیدیوں نے کہا کہ حکام بالا نے سابق وزیراعظم رفیق الحریری کے قاتل کو بھی رہا کردیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق قیدیوں کے اہلخانہ نے ایمنسٹی قانون سے متعلق اجلاس کے موقع پر بلڈنگ کے باہر دھرنا بھی دیا اور اپنے قیدیوں کے لیے معافی کا قانون لانے کا مطالبہ کیا تاہم پارلیمنٹیرینز کے درمیان اتفاق نہ ہونے پر معاملہ کمیٹی کے سپرد کردیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں