غیررجسٹرڈ موبائل کی تصدیق کروائیں، پی ٹی اے کی صارفین کو ہدایت -
The news is by your side.

Advertisement

غیررجسٹرڈ موبائل کی تصدیق کروائیں، پی ٹی اے کی صارفین کو ہدایت

یہ غلط تاثر ہے کہ مقررہ تاریخ کے بعد غیرتصدیق شدہ موبائل بند ہوجائیں گے، چیئرمین پی ٹی اے

اسلام آباد: پاکستان ٹیلی کمیونیکشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے غیررجسٹرڈ موبائل  اور جی ایس ایم ڈیوائسز کے حوالے سے نئی پالیسی کا اعلان کردیا، صارفین کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ 20 اکتوبر 2018 سے قبل اپنے موبائلز و دیگر مواصلاتی ڈیوائسز کی تصدیق کرلیں۔

پاکستان ٹیلی مواصلات اتھارٹی (پی ٹی اے) نے صارفین کو متنبہ بذریعہ ایس ایم ایس کرنا شروع کردیا ہے کہ وہ 20 اکتوبر سے پہلے اپنے فون کی تصدیق کرلیں بصورت دیگر یہ مواصلاتی کام کے استعمال کے قابل نہیں رہے گا۔

پی ٹی اے کے مطابق صرف تصدیق شدہ موبائل فون اور GSM ڈیوائسز  ہی 20 اکتوبر کے بعد قابل استعمال ہوں گے جبکہ غیر رجسٹرڈ فونز پر کالز موصول نہیں ہو گی البتہ اس پر بذریعہ وائی فائی نیٹ استعمال کیا جاسکے گا۔

پی ٹی اے نے صارفین کو سختی سے ہدایت کی ہے کہ وہ 20 اکتوبر کے بعد رجسٹرڈ موبائل خرید کر استعمال کریں، مذکورہ تاریخ سے قبل اگر کسی صارف کو میسج نہ بھی ملے تو وہ بذریعہ ویب سائٹ، ایس ایم ایس یا موبائل ایپ سے اپنے فون کا اسٹیٹس چیک کرسکتا ہے۔

پاکستان ٹیلی کمیونیکشن اتھارٹی نے تصدیق کے تین طریقے رکھے۔

  1. پہلا ایس ایم ایس کے ذریعے
  2. دوسرا موبائل (اینڈائیڈ) ایپلیکیشن کے ذریعے
  3. تیسرا ویب سائٹ کے ذریعے

طریقہ کار

اپنے موبائل کا IMEI نمبر چیک کرنے کے لیے *#06#ڈائل کریں اور اسکرین پر لکھے نمبر کو میسج میں لکھ کر 8484 پر بھیجیں، اسی طرح ان نمبرز کو ویب سائٹ اور اینڈرائیڈ ایپلیکشن پر بھی چیک کیا جاسکتا ہے۔

تینوں طریقوں سے رجسٹریشن چیک کرنے پر پی ٹی اے کی جانب سے صارف کو جواب میں درج ذیل میں سے کوئی ایک پیغام موصول ہوگا۔

پہلا: آئی ایم ای آئی کمپیلینٹ (IMEI Compliant) یعنی صارف کا موبائل نیٹ ورک سے رجسٹرڈ اور تصدیق شدہ ہے، یہ موبائل بلاک نہیں ہوگا۔

دوسرا: ویلڈ آئی ایم ای آئی (Valid IMEI) یعنی صارف کے موبائل کا IMEI کوڈ GSMA سے تصدیق شدہ ہے مگر PTA میں اس کا کوئی ریکارڈ نہیں لہذا اسے رجسٹرڈ کروائیں وگرنہ یہ 20 اکتوبر کے بعد قابل استعمال نہیں ہوگا۔

تیسرا: ان ویلڈ آئی ایم ای آئی (Invalid IMEI) یعنی صارف کا موبائل GSMAاور  PTA دونوں سے رجسٹرڈ اور منظور شدہ نہیں ہے کیونکہ آپ جعلی IMEI والا موبائل استعمال کررہے ہیں جو 20 کے بعد کالنگ کے لیے استعمال نہیں ہوگا۔

گوگل پلے اسٹور ایپلیکشن لنک: https://play.google.com/store/apps/details?id=pk.gov.dirbs.dvspublic …

ویب سائٹ لنک: https://dirbs.pta.gov.pk/

موبائل ایپلیکیشن یا ویب سائٹ کے ذریعے تصدیق کرنے والے صارفین اپنا IMEI نمبر ایپلیکیشن کے سرچ باکس میں لکھ کر submit کا بٹن دبائیں۔


چیئرمین پی ٹی اے کی وضاحت

دوسری جانب چیئرمین پی ٹی اے محمد نوید نے اے آر وائی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 20 اکتوبر کے بعد وہ موبائل قابل استعمال نہیں ہوں گے جن کی شکایات درج ہوں گی البتہ 20 اکتوبر کے بعد فون صرف ایک سم پر ہی چل سکے گا۔

انہوں نے وضاحت کی کہ Compliant والے فون کا مطلب انہیں ٹیکس ادا کرنے کے بعد پاکستان لایا گیا تو یہ بالکل ٹھیک ہیں جبکہ Valid موبائلز کا یہ مطلب ہے کہ ان کو GSM پر رجسٹرڈ کیا جاچکا اسی طرح Non Compliantفون جو استعمال میں ہوگا اُسے پی ٹی اے رجسٹرڈ کردے گا جس کے بعد اس پر بھی وہی نمبر استعمال ہوگا جو مقررہ تاریخ تک استعمال کیا گیا۔

چیئرمین پی ٹی اے کا کہنا تھا کہ مقررہ تاریخ یعنی 20 اکتوبر کے بعد اگر صارفین Non Compliantفون خریدیں گے تو ان سے رابطہ کر کے تصدیق کے لیے کاغذات طلب کیے جائیں گے ، اگر انہوں نے پیش کردیے تو اسے رجسٹرڈ کردیا جائے گا۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’یہ غلط تاثر ہے کہ 20 اکتوبر کے بعد تمام موبائل بند ہوجائیں گے ایسا ہرگز نہیں ہے، جو فون رجسٹرڈ نہیں ہوں گے اور ایک ہی نمبر پر استعمال ہورہے اُن پر بس وہی نمبر چلایا جاسکے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں