The news is by your side.

Advertisement

تحریک انصاف کے رہنما قاسم سوری پر شاہ زین بگٹی کے گارڈز کا حملہ

اسلام آباد: کوہسار کے ریسٹورنٹ میں پی ٹی آئی رہنما قاسم سوری پر شاہ زین بگٹی کے گارڈز نے حملہ کردیا ، حملہ شاہ زین بگٹی کے بھائی اوررکن بلوچستان اسمبلی گہرام بگٹی کی ہدایت پر کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے رہنما قاسم سوری پر شاہ زین بگٹی کے گارڈز نے حملہ کردیا ، واقعہ اسلام آباد کےعلاقے کوہسارکے مقامی ریسٹورنٹ میں پیش آیا۔

پی ٹی آئی رہنما قاسم سوری سحری کیلئےریسٹورنٹ میں بیٹھے تھے ، اس دوران حملہ آوروں نے شاہ زین بگٹی زندہ باد اور پی ٹی آئی مردہ باد کے نعرے لگائے۔

واقعے کے بعد پولیس کی نفری جائے وقوعہ پرپہنچ گئی ، حملہ شاہ زین بگٹی کے بھائی اورایم پی اےگہرام بگٹی کی ہدایت پرہوا ، حملہ آورمیریٹ سمیت کئی ہوٹلوں میں پی ٹی آئی رہنماؤں کو تلاش کرتے رہے ، جب کوہسار کے ریسٹورینٹ میں پی ٹی آئی رہنما نظرآئے تو حملہ کردیا۔

ایس ایس پی آپریشن نے بتایا کہ قاسم سوری میڈیکل کرانےکیلئےاسپتال چلے گئے ہیں، میڈیکل اوردرخواست آنےکےبعدکارروائی عمل میں لائی جائےگی تاہم پی ٹی آئی رہنما قاسم سوری کا بیان قلمبند کرلیا گیا ہے، ملزمان کی شناخت ویڈیو کے ذریعے جلد کرلی جائے گی۔

قاسم سوری سے اظہار یکجہتی کے لیے شہریوں کی بڑی تعداد میں جمع ہوگئی۔

حملے کے بعد قاسم سوری نے بیان میں کہا کہ جھ پر ابھی ابھی مقامی ریسٹورنٹ میں حملے کی کوشش کی گئی، غنڈوں کو ریسٹورنٹ میں آئی ہوئی فیملیز اور ویٹرز نے مار بھگایا۔

ان کا کہنا تھا کہ سرکاری گاڑیوں میں یہ آکر دندناتے پھررہےہیں، عوام باشعور ہیں ان کی بدمعاشیاں نہیں چلے گی، امپورٹڈحکومت اب اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی، لوگ ان کو جینے نہیں دیں گے اگر یہ اس طرح کریں گے، میں لوگوں کو سلام پیش کرتا ہوں لوگ نکلے ہیں ۔

Comments

یہ بھی پڑھیں