The news is by your side.

Advertisement

سانحہ ماڈل ٹاؤن پر تحریک انصاف نے پنجاب حکومت سے جواب مانگ لیا

لاہور : سانحہ ماڈل ٹاؤن پر تحریک انصاف نے پنجاب حکومت سے جواب مانگ لیا، پی ٹی آئی نے خط میں مطالبہ کیا ہے کہ وزیراعلی پنجاب باقرنجفی کمیشن کی رپورٹ فوری منظر عام پر لائی جائے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف نے سانحہ ماڈل ٹاؤن پر جسٹس باقرنجفی کمیشن کی رپورٹ منظر عام پر لانے کیلئے پرنسپل سیکرٹری وزیر اعلی پنجاب کے نام خط لکھ دیا، خط پی ٹی آئی رہنما عندلیب عباس کی جانب سے تحریر کیا گیا ہے۔

پی ٹی آئی کے خط میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب کے حکم پر خون کی ہولی کھیلی گئی، خواتین سمیت سولہ افراد جاں بحق،سو زخمی ہوئے، جسٹس باقرنجفی کمیشن کی رپورٹ کی تفصیل دی جائے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ تین سال گزرنے کے باوجود متاثرین انصاف کے منتظر ہیں، کمیشن رپورٹ کے لیک حصے کے مطابق کارروائی کے احکامات پنجابحکومت نے دیئے۔


مزید پڑھیں  : سانحہ ماڈل ٹاؤن، پاکستان عوامی تحریک آج دھرنا دے گی


تحریک انصاف کے جانب سے خط میں کہا گیا ہے کہ وزیر اعلیٰ نے سترہ جون دو ہزار چودہ کو کہا تھا ذمے دار وہ ہوئے تو مستعفی ہو جائیں گے، رپورٹ میں واضح ہوچکا ہے ۔ وزیراعلیٰ پنجاب ہی ذمے دار ہیں،استعفیٰ کیوں نہ دیا؟راناثنا اللہ کو بھی ذمے دار ٹھہرایا گیا، پھر انہیں بطور وزیر قانون کیوں بحال کیا؟

خط میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب باقرنجفی کمیشن کی رپورٹ فوری منظر عام پر لائیں، رپورٹ سامنے نہیں لائی جاتی تو عدالت عظمیٰ اس دہشتگردی کا نوٹس لے۔

یاد رہے کہ تین سال قبل پولیس کی جانب سے ماڈل ٹاون میں منہاج القرآن مرکز کے ارد گرد سے رکاوٹیں ہٹانے کے نام پر آپریشن کیا گیا جہاں کارکنوں اور پولیس کے درمیان مزاحمت ہوئی، پولیس کے شدید لاٹھی چارج کے سبب 14 افراد جاں بحق اور درجنوں زخمی ہوگئے تھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں