The news is by your side.

Advertisement

خواجہ داؤد کے عثمان بزدار پر الزامات، پی ٹی آئی ارکان کا تنظیمی کارروائی کا مطالبہ

ڈی جی خان: پاکستان تحریک انصاف کے رکن پنجاب اسمبلی خواجہ داؤد سلیمانی کے وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار پر الزامات پر ڈیرہ غازی خان کے پی ٹی آئی ارکان اسمبلی عثمان بزدار کے حق میں بول پڑے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ڈی جی خان سے پی ٹی آئی ارکان نے خواجہ داؤد کے وزیر اعلیٰ پر الزامات کو مسترد کرتے ہوئے خواجہ داؤد کے خلاف تنظیمی کارروائی کا مطالبہ کر دیا ہے۔

پی ٹی آئی رکن سردار احمد علی خان دریشک کا کہنا تھا خواجہ داؤد کے پیچھے کون ہے، ہم بے نقاب کریں گے، اور بہت جلد ثبوت بھی منظر عام پر لے آئیں گے۔

سردار دریشک نے کہا کہ خواجہ داؤد سینیٹ انتخاب سے قبل کسی اشارے پر متحرک ہوئے ہیں، اور وہ اپنی نا اہلی چھپانے کے لیے الزامات لگا رہے ہیں، خواجہ داؤد حلقے میں جاتے نہیں لوگ بھی ان سے نالاں ہیں۔

پی ٹی آئی ایم پی اے کی پرویز الہٰی سے وزیر اعلیٰ کی شکایت

انھوں نے کہا خواجہ داؤد کے پیچھے موجود قوتوں کو بے نقاب کیا جائے گا، حکومت کو چھوڑ کر کوئی اپوزیش میں نہیں جانا چاہتا، وزیر اعلیٰ پنجاب کی قیادت میں تمام پی ٹی آئی ارکان متحد ہیں۔

حنیف پتافی نے بھی خواجہ داؤد کے حلقے میں کام نہ ہونے کا دعویٰ مسترد کر دیا، انھوں نے کہا خواجہ داؤد کے حلقے کے لیے ساڑھے 3 ارب روپے کا پیکج دیاگیا، جنوبی پنجاب میں ترقیاتی کاموں کا جال بچھایا جا رہا ہے، مجموعی بجٹ کا 33 فی صد جنوبی پنجاب کے لیے لازم قرار دیاگیا ہے، اختلاف رائے ہو سکتا ہے لیکن الزام تراشی نہیں ہونی چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں