The news is by your side.

Advertisement

حکومتی اراکین نے سندھ میں گورنر راج کی مخالفت کر دی

اسلام آباد: وزیر اعظم کی زیر صدارت اجلاس میں اراکین کی اکثریت نے سندھ میں گورنر راج کی مخالفت کر دی۔

ذرائع کے مطابق حکومتی سیاسی کمیٹی کے اجلاس میں‌ اراکین کی اکثریت نے رائے دی کہ اگر سندھ میں‌ گورنر راج لگایا گیا تو اس سے معاملات مزید خراب ہو سکتے ہیں۔

اراکین کا کہنا ہے کہ گورنر راج سے قانونی معاملات میں بھی پیچیدگیاں پیدا ہوں گی، اراکین کی رائے سن کر وزیر اعظم عمران خان نے معاملے پر مزید غور کرنے کی ہدایت کر دی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سندھ میں‌گورنر راج کے صرف 2 حمایتی ہیں، جن میں‌ ایک شیخ رشید ہیں۔

دوسری طرف اجلاس میں وفاقی حکومت نے ہارس ٹریڈنگ کے خلاف صدارتی ریفرنس لانے کا فیصلہ کیا ہے، یہ ریفرنس سپریم کورٹ کے 2018 کے فیصلے کی روشنی میں لایا جائے گا، اس سلسلے میں مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان اور اٹارنی جنرل نے وزیر اعظم کو بریفنگ بھی دی۔

سندھ میں گورنر راج کا معاملہ، وزارت داخلہ میں مشاورت کا عمل مکمل

سیاسی کمیٹی کے اجلاس میں تحریک عدم اعتماد ناکام بنانے کا بھی عزم کیا گیا، وزیر اعظم عمران خان نے منحرف اراکین کے خلاف قانونی کارروائی کی بات کی، انھوں نے کہا ایسے اقدامات کریں گے کہ مستقبل میں کسی کو ہارس ٹریڈنگ کی جرات نہ ہو۔

وزیر اعظم عمران خان نے اپوزیشن کی تمام جماعتوں کا ڈٹ کر مقابلہ کرنے کا اعلان کیا اور کہا 27 مارچ کے جلسے میں قوم تبدیلی کے ساتھ نظر آئے گی، یہ چاہے جتنا بھی پیسہ لگا لیں، ان کا مقابلہ کروں گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں