The news is by your side.

Advertisement

عام انتخابات 2018: تحریک انصاف نے امیدواروں کی حتمی فہرستیں جاری کر دیں

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف نے 2018 کے عام انتخابات کے لیے اپنے امیدواروں کی حتمی فہرستیں جاری کردیں، فہرستوں میں معمولی تبدیلیاں کی گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی نے معمولی تبدیلیاں کرنے کے بعد اپنے امیدواروں کی حتمی فہرستیں جاری کردیں، چیئرمین عمران خان نے منظوری دے دی، ذرائع کا کہنا ہے کہ فہرستیں حتمی ہیں، مزید کوئی تبدیلی نہیں ہوگی۔

پی ٹی آئی نے نظرثانی کے بعد کئی امیدوار تبدیل کردیے، بنی گالہ میں احمد حسین کا احتجاج رنگ لے آیا، ٹکٹ جاری کر دیا گیا، ملتان کے این اے 154 سے سکندر بوسن سے ٹکٹ واپس لے لیا گیا۔

ترجمان پی ٹی آئی نے کہا ہے کہ قومی اسمبلی کے لیے 244 امیدواروں کو ٹکٹ دیے گئے ہیں، پنجاب اسمبلی کے لیے277، سندھ اسمبلی کے لیے 97، کے پی اسمبلی کے لیے97، بلوچستان اسمبلی کے لیے 40، کراچی سے قومی اسمبلی کے لیے 21 امیدواروں کو ٹکٹ جاری کیے گئے۔

ترجمان کے مطابق عمران خان قومی اسمبلی کے 5 حلقوں سے میدان میں اتریں گے، جن میں این اے 35 بنوں، این اے 53 اسلام آباد، این اے 95 میانوالی، این اے 131 لاہور اور این اے 243 کراچی شامل ہیں۔

پرویز خٹک این اے 25 نوشہرہ، اسد عمر این اے 54 اسلام آباد سے جب کہ شاہ محمود قریشی این اے 155 ملتان، این اے 220 عمر کوٹ اور این اے 221 تھر پارکر سے انتخاب لڑیں گے۔

ترجمان کے مطابق پی ٹی آئی نے قومی اسمبلی کے لیے 14 خواتین کوٹکٹ جاری کیے، این اے 13 مانسہرہ سے عنبرین سواتی، غلام بی بی بھروانہ  این اے 115 جھنگ سے، این اے 90 سرگودھا سے نادیہ عزیز، فردوس عاشق اعوان  این اے 72 سیالکوٹ، زر تاج گل  این اے 191 ڈیرہ غازی خان، قراۃ العین  این اے 201 لاڑکانہ سے اور این اے 200 سے حلیمہ بھٹو الیکشن لڑیں گی۔

عام انتخابات 2018: پیپلزپارٹی نے لاہور سے امیدواروں کی حتمی فہرست تیار کرلی


فواد چوہدری این اے 67 جہلم سے، ابرار الحق این اے 78 نارووال سے، ندیم افضل چن این اے 88 سرگودھا سے،غلام سرور خان این اے 59 اور این اے 63 راولپنڈی سے، نذر گوندل این اے 86 منڈی بہاؤالدین سے، شہر یار آفریدی این اے 32 کوہاٹ سے، علی امین گنڈاپور این اے 38 ڈیرہ اسماعیل خان سے، طاہرصادق این اے 55 اور این اے 56 اٹک سے، عبد المجید خان نیازی این اے187 لیہ سے، جب کہ علی محمد خان این 22 مردان سے الیکشن لڑیں گے۔

ترجمان کے مطابق پی ٹی آئی نے این اے 64 اور 65 سے امیدوار کھڑا نہیں کیا، ان حلقوں میں ق لیگ سے ایڈجسٹمنٹ کے فیصلے کے مطابق شیخ رشید کی حمایت کی جائے گی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں