The news is by your side.

Advertisement

پنجاب میں ڈینگی کیسز میں ریکارڈ اضافہ

لاہور : پنجاب میں ڈینگی کے مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے، صوبے بھر میں ایک دن میں 223 کیسز سامنے آئے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں ڈینگی کا پھیلاؤ تیز ہوگیا ، گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران صوبہ بھر سے ڈینگی کے 223 مریض سامنے آگئے ، پنجاب میں رپورٹ ہونے والے ڈینگی کے 167 مریضوں کا تعلق لاہور سے ہے۔

سیکرٹری عمران سکندر بلوچ کا کہنا ہے کہ گزشتہ روز راولپنڈی سے 35، قصور سے 4 اور نارووال سے ڈینگی کے 3 مریض، فیصل آباد اور خوشاب سے 2 دو جبکہ شیخوپورہ، اٹک، چکوال، ملتان اور سیالکوٹ سے ڈینگی کا 1 ایک مریض رپورٹ ہوا۔

عمران سکندر نے بتایا کہ گزشتہ روز جھنگ، خانیوال، راجن پور، ساہیوال اور بہاولنگر سے بھی ڈینگی کا 1 ایک مریض رپورٹ ہوا، رواں سال پنجاب بھر سے اب تک ڈینگی کے 1,659 کنفرم کیسز سامنے آئے ہیں، جن میں سے 1,347 کیسز کا تعلق لاہور سے ہے۔

محکمہ صحت پنجاب کے سیکرٹری کے مطابق لاہور کے گنگارام میں 18،جناح ہسپتال میں 15, میو ہسپتال میں 11 اور ڈاکٹرز ہسپتال میں ڈینگی کے 9 ، سروسز  ہسپتال اور شالیمار ہسپتال میں 8 آٹھ، گلاب دیوی میں 7 اور فاروق ہسپتال میں ڈینگی کے 5 پانچ مریض داخل ہیں۔

اسی طرح لاہور کے گھرکی ٹرسٹ ہسپتال اور یورنیورسٹی آف لاہور ٹیچنگ ہسپتال میں ڈینگی کے 4 چار مریض اور فاطمہ میموریل ہسپتال، جنرل ہسپتال، حمید لطیف ہسپتال، عمر ہسپتال اور اتفاق ہسپتال میں ڈینگی کے 3 تین مریض آئے۔

عمران سکندر کا کہنا تھا کہ لاہور کے چلڈرن ہسپتال، مسعود ہسپتال 2 دو، جںکہ عادل ہسپتال اور سینٹرل پارک ٹیچنگ ہسپتال میں ڈینگی کا 1 ایک مریض ، ڈی ایچ کیو ہسپتال۔1 میاں منشی، ایور کئیر ہسپتال، لائف لائن، منصورہ ہسپتال اور نواز شریف ہسپتال میں ڈینگی کا 1 ایک مریض داخل ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ مون سون میں ڈینگی سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر ازحد ضروری ہیں، مون سون کے دوران ڈینگی سے بچاؤ کے لئے شہری زیادہ ذمہ داری کا مظاہرہ کریں، خصوصاً بارش کا پانی رہائشی علاقوں میں نہ جمع ہونےدیں۔

محکمہ صحت پنجاب کے مطابق گذشتہ روز محکمہ صحت کی ٹیموں نے پنجاب بھر میں 399,880 ان ڈور مقامات اور 85,958 آؤٹ ڈور مقامات کوچیک کیا، ٹیموں نے اس دوران 1,366 مقامات سے لاروا تلف کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں