The news is by your side.

Advertisement

لاہور ہائی کورٹ کا وزیراعلی ٰحمزہ شہباز پر ایک لاکھ روپے کا جرمانہ

لاہور : لاہور ہائی کورٹ نے وزیراعلی ٰحمزہ شہباز پر ایک لاکھ روپے جرمانہ عائد کردیا اور جرمانہ کی رقم 30مئی سے قبل لاہور ہائی کورٹ بار کے اکاؤنٹ میں جمع کرانے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ نے حمزہ شہباز کو عہدہ سے ہٹانے کی درخواست پر سماعت کا تحریری حکمنامہ جاری کردیا ہے ، جس میں کہا گیا ہے کہ جواب جمع نہ کرانے پر وزیراعلی ٰحمزہ شہباز پر ایک لاکھ روپے جرمانہ عائد کیا ہے۔.

حکم نامے میں کہا ہے کہ حکومت پنجاب ،ڈپٹی اسپیکر،سیکرٹری پنجاب اسمبلی اورپرنسپل سیکرٹری ٹوسیکریٹری پر بھی جرمانہ کیا گیا ، لاہورہائی کورٹ کی جانب سے ایک ایک لاکھ روپے جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔

تحریری حکمنامے میں جرمانہ کی رقم 30مئی سے قبل لاہور ہائی کورٹ بار کے اکاؤنٹ میں جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

لاہور ہائی کورٹ نے حمزہ شہبازکو عہدے سے ہٹانے کی درخواست پر جواب جمع نہ کروانے پر وزیر اعلیٰ پنجاب ڈپٹی سپیکر سمیت دیگر فریقین کو ایک.ایک.لاکھ. روپے جرمانہ عاٸد کر دیا

گذشتہ روز چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ امیر بھٹی نے وزیر اعلی پنجاب حمزہ شہباز کو عہدے سے ہٹانے کے لیے دائر درخواستوں پر سماعت کرتے ہوئے جواب جمع نہ کروانے پر برہمی کا اظہار کیا اور وزیر اعلی حمزہ شہباز، پنجاب حکومت ڈپٹی اسپیکر کو جواب جمع نہ کروانے پر ایک لاکھ روپے جرمانہ عائد کردیا تھا۔

دوران سماعت وزیراعلی حمزہ شہباز کے وکیل نے جواب کروانے کیلئے مہلت کی استدعا کی، جس کی ق لیگ کے وکیل نے مخالفت کی تھی۔

عدالت نے.ریمارکس دیئے کہ قانون کے مطابق حکومت کے رائٹس سلب نہیں کر سکتے عدالت آپ کے کہنے پر نہیں چلے گی، ق لیگ کے وکیل نے موقف اختیار کیا تھا کہ حمزہ شہباز کے پاس مطلوبہ ووٹ نہیں۔

چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ سوال یہ نہیں ہے کہ حمزہ شہباز کے پاس اکثریت ہے یا نہیں، سوال یہ ہے کہ آرٹیکل 63 اے پر سپریم کورٹ کے فیصلے کا اطلاق ماضی سے ہوگا یا نہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں