site
stats
پاکستان

پنجاب کی 63 کالعدم تنظیموں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر پابندی عائد

لاہور: پنجاب حکومت نے قربانی کی کھالیں جمع کرنے کے حوالے سے 63 کالعدم تنظیموں پر پابندی عائد کردی۔ صوبائی حکومت نے اس سلسلے میں کالعدم تنظیموں کی فہرست ضلعی ایڈمنسٹریٹرز کو ارسال کردی ہے تاکہ پابندی کا عملی نفاذ ممکن ہوسکے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب میں 63 کالعدم تنظیمیں عید الاضحیٰ کے موقع پر قربانی کی کھالیں جمع نہیں کرسکیں گی، حکومت پنجاب کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے میں واضح الفاظ میں لکھا گیا ہے کہ کالعدم تنظیمیں کسی بھی صورت عید الاضحیٰ کے موقع پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے کی مجاز نہیں ہیں۔

کھالیں جمع کرنے کے حوالے سے خواہش مند تنظیمیں ڈی سی اوز کو درخواستیں دیں گی جس کے بعد ڈسٹرکٹ انٹیلی جنس کمیٹی اپنے اجلاس میں تنظیموں کو بتائے گئے خاص مقامات سے کھالیں جمع کرنے کی اجازت دے گی۔

اس بات کی خاص طور پر ہدایت کی گئی ہے کہ قربانی کی کھالیں جمع کرنے کے لیے لاؤڈ اسپیکر کے استعمال پر مکمل پابندی عائد ہوگی۔

دریں اثناء منہاج القرآن فاؤنڈیشن پر فی الحال کوئی پابندی عائد نہیں کی گئی ہے مگر حکومت پنجاب ڈی سی اوز کو زبانی طورپرپابندی لگانے کا کہہ سکتی ہے۔

ڈسٹرکٹ انٹیلی جنس کمیٹیاں مختلف اضلاع میں مہناج القرآن فاؤنڈیشن کو کھالیں جمع کرنے کی اجازت سے روک سکتی ہیں۔

سندھ حکومت نے تنبیہہ کی ہے کہ قربانی کی کھالیں جمع کرنے پر عائد پابندی کی خلاف ورزی کرنے والوں کو قرار واقعی سزا دی جائے گی۔

واضح رہے کہ سندھ اور بلوچستان کی حکومتوں نے بھی کالعدم تنظیموں پر قربانی کی کھالیں جمع کرنے کی پابندی عائد کررکھی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top