The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف اگر بیرونِ ملک سے ڈاکٹر منگوانا چاہتے ہیں تو بتادیں، پنجاب حکومت کی پیش کش

لاہور: وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت نے شریف خاندان کو پیش کش کی ہے کہ حکومت حساس معاملے پر پوائنٹ اسکورنگ نہیں چاہتی، نوازشریف اور مسلم لیگ ن اگر بیرونِ ملک سے کوئی ڈاکٹر منگوانا چاہتے ہیں تو بتادیں۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں وزیرقانون کا کہنا تھا کہ ہر معاملے پرتحمل کے ساتھ بات کرنےکوتیارہیں، اپوزیشن بیٹھ کر بات کرے کیونکہ اسمبلی کی سیڑھیوں پر مسائل کا حل نہیں نکل سکتا۔

اُن کا کہنا تھا کہ اپوزیشن حل نکالناچاہتی ہے توپھرمل کر بیٹھے، نوازشریف اگر چاہیں تو حکومت انہیں شفاء اسپتال منتقل کرنےکو بھی تیار ہے ہم اس معاملے پر کوئی پوائنٹ اسکورنگ نہیں چاہتے۔ راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ نوازشریف بتائیں انہیں مرض کیا ہے، اگر وہ بیرونِ ملک سے ڈاکٹر بلوانا چاہتے ہیں تو وہ بھی بتادیں۔

مزید پڑھیں: نوازشریف 3 بار وزیراعظم رہے اُن کا احترام کرتے ہیں، علی محمد خان

وزیر قانون کا کہنا تھا کہ نوازشریف نے خود ہی اسپتال منتقل ہونے سے انکار کیا، حکومت بورڈ کی سفارشات پر مکمل عمل کررہی ہے اگر نوازشریف کے لندن میں موجود ڈاکٹر سے رابطہ کرنا ہے تو ٹیلی کانفرنس کے ذریعے یہاں کے معالج بات کرلیں گے۔

بعد ازاں اسپیکرپنجاب اسمبلی نےنوازشریف کی صحت کے معاملےپر حکومت اور اپوزیشن کے درمیان اتفاق رائے کرادیا جس کے بعد دونوں مسئلے کو حل کرنے کے لیے ایک ساتھ بیٹھنے کو تیار ہوئے۔

اسپیکر اسمبلی کا کہنا تھا کہ نوازشریف کی صحت کولے کر سنجیدہ ہیں، اس معاملے پر کوئی سیاست نہیں ہوگی اور نہ کسی کو اجازت دی جائے گی، حکومت اوراپوزیشن بیٹھ کرمسئلےکاحل نکالے جبکہ ایوان  اس مسئلے پر وفاق سے بھی بات کرے گا۔

یہ بھی پڑھیں: نواز شریف کوبہترین طبی سہولتیں دی جائیں ،وزیراعظم عمران خان کا اعلان

اُن کا کہنا تھا کہ علم میں ہےوزیرقانون وفاقی حکومت سےرابطےمیں ہیں، راجہ بشارت  اور وزیرصحت کےساتھ اپوزیشن کے2 ممبر بیٹھ جائیں اور مسئلے کا حل تلاش کر کے تجاویز ایوان میں پیش کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں