site
stats
پاکستان

ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال جاری، او پی ڈیز بند، مریض بے بس

لاہور : پنجاب کے مختلف شہروں میں نیشنل انڈیکشن پالیسی کیخلاف ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال کے دوران او پی ڈیز بند ہونے کے باعث مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال جاری ہے ، مریض بے بسی کی تصویر بنے رہے، نشتر اسپتال ملتان کی او پی ڈی میں ینگ ڈاکٹرز کی بدمعاشی جاری رہی، مسیحائی کا دعویٰ کرنیوالوں نے اپنے مفاد کیلئے زبردستی آج بھی مریضوں کو او پی ڈی سے نکالنا شروع کردیا۔

جس کے بعد نشتراسپتال انتظامیہ نے او پی ڈی میں پولیس کی بھاری نفری طلب کرلی، جس پر ینگ ڈاکٹرز نے او پی ڈی میں شدید نعرے بازی کی۔

پنجاب بھر کی طرح فیصل آباد میں ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال کا سلسلہ جاری ہے، الائیڈ اسپتال میں ہڑتالی ڈاکٹروں کی ریلی نکالی اور پی ایم سی چوک پر دھرنا دے کر سرگودھا روڈ بلاک دیا۔

فیصل آباد میں ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال میں پی ایم اے اور ایم ٹی اے بھی شامل ہوگئے، سول اسپتال اورکارڈیالوجی انسٹیٹیوٹ کی او پی ڈیز اور الائیڈ اسپتال کا آپریشن تھیٹر بند ہونے سے مریضوں کو سخت اذیت کا سامنا رہا۔


مزید پڑھیں : پنجاب میں ینگ ڈاکٹرز کا ایک بار پھر احتجاج، او پی ڈیز بند


راولپنڈی میں بھی ینگ ڈاکٹرز کی ہڑتال کے باعث سرکاری اسپتالوں میں او پی ڈی سروس معطل رہی، ڈاکٹرز نے بنظیربھٹو اسپتال کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا۔

ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ یہ صرف ڈاکٹرز کے حقوق کی جنگ نہیں جبکہ میڈیکل ٹیچر ایسوسی ایشن نے ینگ ڈاکٹرز کی حمایت کردی ہے۔

اس سے قبل ینگ ڈاکٹرز کے صدر معروف وینس کا کہنا ہے کہ پنجاب بھر میں او پی ڈیز مطالبات کی منظوری تک بند رہیں گے، اگرمطالبات نا مانے گئے تو پھر اسپتالوں میں انڈور سروسز بھی مکمل طور پر بند کردی جائیں گی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top