The news is by your side.

Advertisement

اے کے 47 کے موجد کی 100 ویں سالگرہ

ماسکو : خطرناک و مشہور ہتھیار اے کے 47 المعروف کلاشنکوف کے موجد میخائیل کلاشنکوف کی 100 ویں سالگرہ منائی گئی۔

تفصیلات کے مطابق روس میں گزشتہ روز دنیا بھر میں بے گناہ انسانوں کے موت کا باعث بننے والے خطرناک ہتھیار اے کے 47 کے موجد کی 100 ویں سالگرہ منائی گئی، اس موقع پر روسی شہریوں نے بڑی تعداد میں اپنے قومی ہیرو کو خراج تحسین پیش کیا۔

میخائیل کلاشنکوف 10 نومبر 1919 میں مغربی سائیبریا میں پیدا ہوئے تھے، جنگ عظیم دوئم کے ابتدائی برسوں میں سوویت یونین کی جرمن فوجیوں کے ہاتھوں شکست اور 1941 میں ایک جھڑپ میں زخمی ہونے کے بعد کلاشنکوف نے 1947 میں اپنی رائفل ڈیزائن کی، جسے کلاشنکوف کے نام سے جانا گیا۔

کلاشنکوف کو ان کے ایجاد کیے گئے ہتھیار کے باعث سوویت یونین میں بطور قومی ہیرو جانا جاتا ہے اور وہ ماسکو کی ماضی کی عظیم فوجی طاقت کی علامت سمجھے جاتے ہیں تاہم ان کے ایجاد کردہ ہتھیار سے دنیا بھر میں لاکھوں افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

کلاشنکوف سے بے گناہوں کی ہلاکت پر میخائل کو اکثر تنقید کا سامنا بھی کرنا پڑا۔

میخائیل کلاشنکوف کو روس میں اس ایجاد پر تعریف کا مستحق قرار دیا گیا اور میخائیل کلاشنکوف کو رائفل بنانے پر ’ہیرو آف رشیا‘ کے ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ مشہورِ زمانہ خودکار رائفل اے کے 47 کے بانی میخائیل کلاشنکوف نے سنہ 2013 میں 94 برس کی عمر میں اپنی موت سے قبل اپنے ایجاد کردہ ہتھیار سے پھیلنے والی تباہی اور اموات کے حوالے سے فکر مندی ظاہر کی تھی۔

فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اب تک 10 کروڑ سے زائد کلاشنکوف دنیا بھر میں‌ فروخت ہوچکی ہیں جبکہ دنیا کے 50 ممالک کی مسلح افواج بھی کلاشنکوف کا استعمال کرتی ہیں جس میں‌عراق و صومالین فوج بھی شامل ہیں.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں