The news is by your side.

Advertisement

جو ملک اپنے فیصلے خود نہیں کرسکتا، وہ کسی دوسرے ملک کی کالونی ہے: پیوٹن

ماسکو: روسی صدر ولادی میر پیوٹن کا کہنا ہے کہ کوئی ملک اپنے فیصلے خود کرسکتا ہے تو وہ آزاد ہے، ورنہ کسی دوسرے ملک کی کالونی ہے۔

روسی میڈیا کے مطابق روسی صدر ولادی میر پیوٹن نے نوجوان کاروباری افراد کے ساتھ ایک میٹنگ کے دوران کہا کہ آج کی دنیا میں ایک آزاد ملک اور کالونی ہونے کے درمیان کوئی درمیانی راستہ نہیں ہے، آپ یا تو خود مختار و آزاد ملک ہیں یا کسی تیسرے ملک کی کالونی ہیں۔

روسی صدر کا کہنا تھا کہ دنیا تیزی سے بدل رہی ہے، کسی قسم کی قیادت، خاص طور پر عالمی قیادت کا دعویٰ کرنے کے لیے کسی بھی ملک، کسی بھی قوم، کسی نسلی گروہ کو اپنی خود مختاری کو یقینی بنانے کی ضرورت ہے۔

مزید پڑھیں: حکومت پاکستان رابطہ کرے گی تو سستا تیل فراہم کریں گے، روسی قونصل جنرل

انہوں نے کہا کہ ایک خود مختار ملک اور کالونی ہونے کے درمیان کوئی درمیانی راستہ نہیں ہے، اگر آپ فیصلے نہیں لے سکتے تو چاہے آپ خود کو آزاد کہیں، آپ آزاد ملک نہیں ہیں۔

روسی صدر نے کہا کہ اگر کوئی ملک خود مختار فیصلے کرنے سے قاصر ہے، تو اس کا مطلب ہے کہ وہ پہلے سے ہی ایک کالونی ہے اور کالونیوں کا تاریخی طور پر کوئی مستقبل نہیں۔

پیوٹن نے کسی مخصوص ملک کا نام نہیں لیا لیکن اس بات پر زور دیا کہ جغرافیائی سیاسی لڑائی ہمیشہ سے جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں