The news is by your side.

Advertisement

قرض اتارو ملک سنوارو، اسٹیٹ بینک کا عوام کی رقم واپس کرنے کا حکم

کراچی : اسٹیٹ بینک نے ’’قرض اتارو ملک سنوارو‘‘ کی بطور قرض حسنہ لی گئی رقم کی امانت انیس سال بعد عوام کو واپس کرنے کے احکامات جاری کردیئے۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندے رضوان عامر کی رپورٹ کے مطابق سال اُنیس سو اٹھانوے میں پاکستان نے بھارت کے جواب میں چاغی کے مقام پر ایٹمی دھماکے کئے۔ جس کے باعث پاکستان پر عالمی اقتصادی پابندیاں عائد کی گئیں تو اس وقت کی نواز حکومت نے قرض اُتارو ملک سنوارو نامی اسکیم متعارف کروائی۔

اس اسکیم میں حکومت نے عوام سے دو سال کیلئے قرض حسنہ مانگا ،  دو سال کی مدت کیلئے لیا گیا یہ قرض حسنہ مختلف بینک 19سال تک دبائے بیٹھے رہے، بینکوں نے لاکھوں نہیں بلکہ کروڑوں روپے کی رقم کا برسوں تک کوئی حساب نہیں دیا۔

آخر کار قرض اُتارو ملک سنوارو کے نام پرعوام سے دو سال کیلئے لیے گئے قرض حسنہ کا اسٹیٹ بینک کو خیال آہی گیا، عوام اپنی رقم کے حصول کیلئے رُل گئے۔

اپوزیشن نے قومی اسمبلی میں معاملہ اُٹھادیا، شور مچا اور بالآخر اسٹیٹ بینک جاگ گیا۔ بینکوں کو لوگوں کی رقوم واپس کرنے کیلئے ہدایات جاری کردیں۔

سرکاری ذرائع کے مطابق قرض اُتارو ملک سنوارو اسکیم کے تحت 47 کروڑ روپے جمع ہوئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں