The news is by your side.

Advertisement

قطر کی فراخ دلی، مظلوم فلسطینیوں کے لیے خزانوں کے منہ کھول دیے

دوحہ: قطر کی حکومت نے غزہ میں محصور فلسطینیوں کو 46 کروڑ ڈالی کی مالی امداد دینے کا اعلان کردیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق قطر کی حکومت نے غزہ میں محصور ایک لاکھ مظلوم فلسطینی خاندانوں کو مالی امداد دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ محصور شہریوں کو مالی امداد دی جائے گی۔

غزہ کی دوبارہ تعمیر نو کے حوالے سے بنائی جانے والی قطری کمیٹی کے سربراہ محمد العمادی کا کہنا تھا کہ فلسطینیوں کی مالی امداد کے لیے 10 کروڑ ڈالرز کی رقم مختص کی گئی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ امیر قطر شیخ تمیم بن حمد الثانی نے فلسطین کے دیگر علاقوں کے شہریوں کے لئے بھی 36 کروڑ ڈالر امداد کا اعلان کیا ہے۔

سرکاری خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فلسطین کو دی جانے والی امداد سے سرکاری ملازموں کو تنخواہیں ادا کی جائیں گی، علاوہ ضرورت مند خاندانوں کی مالی مدد بھی کی جائے گی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ قطر کی جانب سے دی جانے والی مالی امداد سے غزہ کے پاور اسٹیشن کے لئے ایندھن بھی خریدا جائے گا تاکہ غزہ میں بجلی کے بحران کا خاتمہ ممکن ہوسکے۔

واضح رہے کہ قطر کی ری کنسٹرکشن آف غزہ کمیٹی فلسطینیوں کی مالی امداد کے علاوہ فلسطین میں بہت سے دوسرے فلاحی منصوبے بھی چلا رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں