The news is by your side.

Advertisement

صوبائی وزیر امتیاز شیخ کا ایس ایس پی کے خلاف عدالت جانے کا اعلان

کراچی: وزیر توانائی سندھ امتیاز شیخ نے ایس ایس پی ڈاکٹر رضوان کی جانب سے اپنے اوپر لگائے جانے والے الزامات پر عدالت جانے کا اعلان کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق صوبائی وزیر امتیاز شخ نے کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ الیکٹرونک اورسوشل میڈیا پر خفیہ رپورٹ چلائی گئی، الزامات لگائے کہ میں کرمنلزکی سپورٹ کرتا ہوں، کیسی خفیہ رپورٹ تھی جو ڈی آئی جی سے پہلے میڈیا پر تھی۔

امتیاز شیخ کا کہنا تھا کہ ایس ایس پی تیل چوری اور اغوا برائے تاوان میں ملوث رہا، شکارپور کے ڈی آئی جی کو بھی شکایات کی، وزیراعلیٰ سندھ نے انکوائری کی اور پھر تبادلہ کیا۔

صوبائی وزیر کے مطابق اس رپورٹ میں جو فون نمبر بتائے گئے ہیں وہ ہمارے نہیں، ایس ایس پی اسمگلنگ، چوری میں ملوث ہے، رپورٹ کی قانونی حیثیت نہیں ہے، میں ایس ایس پی کے خلاف عدالت بھی جاؤں گا۔

آئی جی سندھ اور حکومت سندھ میں اختلافات کی بڑی وجہ سامنے آگئی

ایس ایس پی شکار پور ڈاکٹر رضوان نے سیکرٹ رپورٹ میں انکشاف کیا کہ شکارپور میں خرابی امن کے ذمےدار سردار اور بااثر سیاسی افراد ہیں۔

سیکرٹ رپورٹ میں بتایا گیا کہ صوبائی وزیر توانائی سندھ امتیاز شیخ شکارپور میں جرائم پیشہ عناصر کی سرپرستی کرتے ہیں، امتیاز شیخ سیاسی مخالفین کو دبانے کے لیے کرمنل ونگ کا استعمال کرتے ہیں،صوبائی وزیر نے کرمنلزکے ذریعے سیاسی مخالف شاہ نواز کے بیٹے کو قتل کرایا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں