The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کی اپوزیشن جلسے میں رکاوٹ نہیں ڈالنے کی ہدایت

لاہور :  وزیرقانون پنجاب راجہ بشارت کاکہنا ہے کہ وزیراعظم ،وزیراعلیٰ کی ہدایت ہے اپوزیشن جلسے میں رکاوٹ نہیں ڈالیں، گوجرانوالہ جلسے میں معاہدے پر عمل نہ ہوا تو مطابق کارروائی کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق وزیر قانون پنجاب راجہ بشارت نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے پی ڈی ایم کی خواہش پرجناح اسٹیڈیم میں جلسے کی اجازت دی گئی، ملک میں کورونا کیسز کی تعداد میں اضافہ ہورہا ہے، اپوزیشن عوام کی جانوں کو خطرے میں نہ ڈالے، اپوزیشن کوقومی ذمہ داریوں کابھی احساس کرنا چاہیے۔

وزیر قانون پنجاب کا کہنا تھا کہ گوجرانوالہ انتظامیہ سےکہا پی ڈی ایم سے معاملات حل کرے، گوجرانوالہ جلسے پر دو ایم این اے صاحبان نے معاہدے پر دستخط کئے ہیں، معاہدے پر عمل نہ ہوا تو قانون کے مطابق کارروائی ہوگی۔

راجہ بشارت نے کہا کہ لکھ کر دیا گیا کہ گوجرانوالہ جلسے کے شرکا کو ماسک، سینی ٹائزر فراہم کریں گے اور سماجی فاصلہ بھی رکھا جائے گا، ہمیں سیاست نہیں کرنی بلکہ گوجرانوالہ کے عوام کا تحفظ کرنا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جلسہ انتظامیہ کی جانب سے ایس اوپیز پر عملدرآمد کی یقینی دہانی کرائی گئی ہے، دیکھتے ہیں جلسے کے منتظمین کس حد تک ایس اوپیز پر عملدرآمد کراتے ہیں، دعویٰ کیاجارہاہے کہ گوجرانوالہ کےجلسہ گاہ میں لاکھوں لوگ جمع ہوں گے ، جلسہ گاہ میں کرسیاں لگائی جائیں تو20ہزار سےزائد لوگ نہیں آسکتے۔

وزیر قانون پنجاب نے کہا کہ کندھے سےکندھا ملاکربھی کھڑے ہوں تو30ہزار سےزائد کی گنجائش نہیں، گوجرانوالہ میں لاکھوں کا جلسہ کہا جائے تو اس سے بڑا جھوٹ نہیں ہوگا۔

راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ اپوزیشن جماعتوں کیساتھ مذاکرات کا دروازہ بند نہیں کیا، یہ پہلی بار ہوا کہ رولز اینڈ ریگولیشن کو ٹیبل پر بیٹھ کر طے کیاگیاہے، کوئی گرفتاری ہوئی ہوتی تو ابھی تک رٹ ہو دائر ہوچکی ہوتی۔

انھوں نے مزید کہا کہ وزیراعظم ،وزیراعلیٰ کی ہدایت ہے اپوزیشن جلسے میں رکاوٹ نہیں ڈالیں ، اس طرح کی جلسیوں سے حکومت نہیں جاتی، کنٹینر اس روٹ پر لگے ہیں جہاں سے انھوں نے جاناہی نہیں ہے، جلسے میں آئینی اداروں کیخلاف تقریر ہو گی تو کارروائی کی جائے گی ۔ 5سال کا مینڈیٹ ملا ہے، جلسے جلوسوں سے حکومت جانے والی نہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں