The news is by your side.

Advertisement

رانا ثنا کے خلاف آج بھی فرد جرم عائد نہ ہو سکی

لاہور: پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثنا اللہ کے خلاف منشیات برآمدگی کیس میں آج بھی فرد جرم عائد نہ ہو سکی۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق رانا ثنا اللہ نے موجودہ حکومت کو کرونا قرار دیتے ہوئے کہا کہ اگر یہ 6 ماہ مزید رہ گئے تو لوگ بھوک سے مارے جائیں گے۔

قبل ازیں، رانا ثنا اللہ آج انسداد منشیات عدالت میں پیش ہوئے، عدالت نے آج فرد جرم عائد کرنی تھی مگر رانا ثنا اللہ کے وکلا کی درخواست پر آج بھی کارروائی نہ ہو سکی، جس پر عدالت نے سماعت 5 دسمبر تک ملتوی کرتے ہوئے وکلا کو فرد جرم پر بحث مکمل کرنے کی ہدایت کر دی۔

رانا ثنا اللہ نے عدالت کو بتایا کہ اے این ایف نے ان کی گاڑی سے پرسنل بیگ نکالا جس میں صرف کپڑے تھے۔

رانا ثنا اللہ نے سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے موجودہ حکومت کو کرونا حکومت قرار دیا، انھوں نے کہا کہ ملک میں کرونا سے اموات 2 فی صد ہیں جب کہ حکومتی کرونا سے سو فی صد۔

ان کا کہنا تھا حکومتی کرونا آٹا چینی کھا گیا، عوام حکومتی کرونا کے خلاف باہر نکلیں اگر یہ 6 ماہ مزید رہ گئے تو ملک کو کھا جائیں گے۔

پشاور میں پی ڈی ایم جلسے کی اجازت نہیں دیں گے، مقدمات درج کیے جائیں گے: شوکت یوسفزئی

انھوں نے مزید کہا ہم حکومت کے خلاف تحریک اس سے پوچھ کر نہیں چلا رہے، پشاور جلسہ ہر صورت ہوگا، ہمیں حکومتی اجازت کی ضرورت نہیں۔

رانا ثنا کا کہنا تھا کہ تحریک کا اگلا فیز کتنا سخت ہوگا اور اس میں کیا آپشن استعمال کیے جائیں گے یہ پی ڈی ایم کی قیادت فیصلہ کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں