The news is by your side.

Advertisement

رانا ثنا اللہ کی ہائی کورٹ بار کی رکنیت معطل

لاہور : ہائی کورٹ بار نے صوبائی وزیر قانون رانا ثناء اللہ رکنیت معطل کرتے ہوئے ان کی بار میں داخلے پر پابندی عائد کر دی ‘ رانا ثنااللہ کے خلاف وکلاء نے لاہور ہائی کورٹ بار کے احاطے میں احتجاجی مظاہرہ کیا‘ صوبائی وزیرقانون کو عہدے سےبرطرف کرنے کا مطالبہ بھی کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق آج بروز جمعہ رانا ثناء اللہ کے بیان کے خلاف لاہور ہائی کورٹ بار کا مذمتی اجلاس منعقد ہوا ‘ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے سیکرٹری آفتاب باجوہ نے کہا کہ رانا ثناللہ کے خلاف توہینِ رسالت کا مقدمہ درج کروائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ صوبے کے وزیرِ قانون نےختم نبوت کو چیلنج ہے‘ جس پر وکلاء خاموش نہیں رہیں گے ۔ بار کے نائب صدر راشد لودھی‘ سیکرٹری عامر سعید اور یگرعہدیداروں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملکی پارلیمنٹ نے متفقہ طور پر قادیانیوں کو غیر
مسلم قرار دیا تھا‘ اب اس موضوع کو جان بوجھ کر چھیڑاگیا ۔

اجلاس میں یہ بھی مطالبہ کیا گیا کہ رانا ثنااللہ ‘ میڈیا کے سامنے ختم نبوت پر ایمان نہ رکھنے والوں کو غیر مسلم قرار دیں اور اپنے بیان پر معافی مانگیں ۔

وکلا نے ہائی کورٹ بار کے احاطے میں رانا ثناءاللہ کے خلافا حتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ رانا ثناء اللہ کے خلاف توہین رسالت کا مقدمہ درج کیا جائے اور عہدے سےبرطرف کیا جائے جبکہ بار نے رانا ثناء اللہ کی ممبر شپ معطل کرتے ہوئے ان کے داخلے پر بھی پابندی عائد کر دی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں