The news is by your side.

Advertisement

رانا ثناء اللہ اہم وزارت کے لیے ڈٹ گئے

اسلام آباد: نئی حکومت آنے کے سات دن بعد بھی وفاقی کابینہ تشکیل نہ دی جا سکی۔

ذرائع کے مطابق آپسی تحفظات کے باوجود وزارت داخلہ راناثنااللہ کو دیے جانے کا امکان ہے 2 لیگی رہنماؤں نے راناثنااللہ پر تحفظات سے قیادت کو آگاہ کیا تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت قانون، دفاع اور اطلاعات پر پی پی کی نظریں ہیں جس پر ن لیگ ہچکچا رہی ہے، ایم کیوایم پاکستان کو بھی مرضی کی وزارتیں دے کر راضی کیا جائے گا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی کابینہ میں شمولیت کے لیے آصف علی زرداری مخالف اور بلاول بھٹو حامی ہیں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) میں آئینی عہدوں کی تقسیم پر بھی اختلافات ہیں۔

پارٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی من پسند وزارتیں اور آئینی عہدوں کی خواہش مند ہے۔ پیپلز پارٹی نے مسلم لیگ (ن) سے چاروں گورنرز اور آئینی عہدوں کا مطالبہ کیا ہے پیپلز پارٹی نے کابینہ میں تین اہم وزارتوں کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں