The news is by your side.

Advertisement

پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے اسسٹنٹ پروفیسرکیخلاف خاتون سے زیادتی کا مقدمہ 3 سال بعد درج

لاہور : پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) کےاسسٹنٹ پروفیسرکیخلاف خاتون سے زیادتی کامقدمہ 3 سال بعد درج کرلیا گیا ، خاتون کا کہنا ہے کہ ڈاکٹرعامربندیشہ شادی کاجھانسہ دے کر 3سال تک زیادتی کانشانہ بناتارہا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی (پی آئی سی) کےاسسٹنٹ پروفیسرکیخلاف خاتون سے زیادتی کامقدمہ درج کرلیا گیا، خاتون سےزیادتی کامقدمہ 3 سال بعد پنجاب ویمن پروٹیکشن اتھارٹی کی ہدایت پر درج کیاگیا ہے۔

اسسٹنٹ پروفیسرڈاکٹرعامربندیشہ اورانکا ساتھی شوکت بسرامقدمےمیں نامزد ہیں ، متاثرہ خاتون کا کہنا تھا کہ 15 اپریل 2019کووالدکولےکرپی آئی سی گئی تھی، ڈاکٹرعامربندیشہ نے شادی کاجھانسہ دےکرزیادتی کی۔

خاتون نے الزام عائد کیا کہ ڈاکٹرعامربندیشہ 3سال تک زیادتی کانشانہ بناتارہا، شادی کی بات کی توغصےمیں آگیا اور شوکت بسراکیساتھ ملکردھمکیاں دیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں