The news is by your side.

Advertisement

قائد متحدہ کے خلاف کارروائی، وزارت داخلہ نے برطانیہ کو ریفرنس ارسال کردیا

اسلام آباد: وزارت داخلہ نے بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کے خلاف برطانوی حکومت کو ریفرنس بھیج دیا جس میں قائد ایم کیو ایم کے خلاف شواہد بھی منسلک ہیں۔

ترجمان وزارت داخلہ کے مطابق حکومت برطانیہ کو بھیجے گئے ریفرنس میں بانی ایم کیو ایم کے خلاف شواہد بھی مہیا کیے گئے جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ برطانوی حکومت اپنے قوانین کے تحت بانی متحدہ قومی موومنٹ کے خلاف کارروائی کرے۔

ریفرنس کے متن میں درج ہے کہ بانی ایم کیو ایم بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے ہیہں ان کی اشتعال انگیز تقاریرنے عوام الناس کو تشدد پر اکسانے کے شواہد ہیں جس کے لیے انہوں نے برطانیہ کی سرزمین استعمال کی ہے اس لیے برطانیہ پاکستان میں بےامنی پھیلانےوالےذے داران کے خلاف کارروائی کرے۔

اسی سے متعلق : کراچی: ایم کیو ایم کارکنان کا اے آر وائی نیوز کے دفتر پر حملہ

ریفرنس کے ساتھ 23 اگست کو کراچی میں درج ایف آئی آر، میڈیا پر حملے کی ویڈیوز اور گرفتار ملزمان کے اقبالی بیانات بھی منسلک کیے گئے ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں : قائد ایم کیو ایم کی متنازعہ تقریر، مختلف تھانوں میں 3 مقدمات درج

واضح رہے کہ 22 اگست کو بانی ایم کیو ایم نے پاکستان مخالف نعرے لگوائے اور لوگوں کو میڈیا چینلز پر حملہ کرنے کے لیے اکسایا جس کے بعد اے آر وائی سمیت کئی چینلز ہر ایم کیو ایم کارکنان کی جانب سے حملے کیے گئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں