The news is by your side.

Advertisement

یوکرینی صدر کی قیام گاہ کے بارے میں انکشاف

کیف: یوکرین کے صدر ولودیمیر زیلنسکی نے کہا ہے کہ وہ دارالحکومت کیف سے باہر نہیں گئے، اور اپنے دفتر میں موجود ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایک ویڈیو بیان میں صدر زیلنسکی نے کہا ہے کہ میں نہ تو خوف زدہ ہیں اور نہ کسی کو خوف زدہ کر رہا ہوں، میں کیف میں ہی رہوں گا۔

یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر ان کے سرکاری اکاؤنٹس پر جاری ہوئی، اور چند ہی گھنٹوں میں وائرل ہوئی، اس میں وہ اپنی قیام گاہ کے بارے میں انکشاف کرتے نظر آتے ہیں۔

اس سے قبل کئی افواہوں اور رپورٹوں میں کہا جا رہا تھا کہ یوکرینی صدر دارالحکومت کیف سے باہر جا چکے ہیں، تاہم زیلنسکی نے کہا میں یہاں شارع بینکوفا میں ہوں جہاں صدارتی دفتر ہے، اور میں روپوش نہیں اور نہ کسی سے خوف زدہ ہوں۔

زیلنسکی نے روسی فوج پر الزام عائد کیا کہ انھوں نے انسانی گزر گاہوں کے ذریعے یوکرینی شہریوں کے انخلا کو ناکام بنایا، یہ انخلا دو طرفہ بات چیت کے بعد طے ہوا تھا، زیلنسکی نے سوال کیا کہ کیا انسانی گزر گاہوں کے حوالے سے سمجھوتے پر عمل درامد ہوا؟ نہیں، اس کے بدلے روسی ٹینکوں، میزائل لانچروں اور روسی بارودی سرنگیں مسلط کی گئیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں