The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کے شہر میں یہ کیا ہوگیا؟

ریاض: سعودی دارالحکومت ریاض میں گرد و غبار کے شدید طوفان کی وجہ سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا رہا، حکام نے غیر ضروری طور پر گھروں سے باہر نہ نکلنے کی ہدایت کی ہے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق دارالحکومت ریاض جمعے کو گرد و غبار کے شدید طوفان کی زد میں رہا، گرد و غبار کے طوفان سے دن میں رات کا گمان ہو رہا تھا۔

سعودی موسمیات کے قومی مرکز کا کہنا ہے کہ جمعے کو ریاض سمیت مملکت کے مختلف علاقوں میں گرد آلود تیز ہوائیں چلتی رہیں، ہوا کی رفتار 50 کلو میٹر فی گھنٹے سے زیادہ ریکارڈ کی گئی جس کی وجہ سے حد نظر محدود ہوگئی۔

قومی مرکز کا کہنا ہے کہ خراب موسم میں احتیاطی تدابیر کی پابندی اشد ضروری ہے، محکمہ ٹریفک نے ڈرائیوروں کو ہیڈ لائٹس آن رکھنے اور احتیاط کا مشورہ دیا ہے۔

موسمیات کے قومی مرکز میں وسطی علاقے کے ڈائریکٹر عائض البلوی کا کہنا تھا کہ ہفتے کے روز دن میں گرد و غبار کے طوفان کی شدت میں بتدریج کمی آئے گی۔

انہوں نے بتایا کہ الشرقیہ اور ریاض میں ہوا کی رفتار ہر 20 منٹ میں 45 کلو میٹر ریکارڈ کی گئی ہے۔

ڈائریکٹر کا مزید کہنا تھا کہ ہفتے کے روز سے درجہ حرارت میں کمی آنے لگے گی اور موسم بہار کے آخر تک درجہ حرارت بڑھنے لگے گا۔

دوسری جانب محکمہ شہری دفاع کا کہنا ہے کہ شہری اور مقیم غیر ملکی ویک اینڈ پر پکنک مقامات پر جانے سے گریز کریں، آئندہ چند دنوں تک خراب موسم کا سلسلہ جاری رہنے کا امکان ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں