The news is by your side.

Advertisement

امریکی کمپنی کے زیر انتظام عراقی ایئر بیس پر راکٹوں سے حملہ

بغداد: عراق کے بلاد ایئر بیس پر پانچ راکٹوں سے حملہ کیا گیا ہے، تاہم کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں آئی۔

تفصیلات کے مطابق عراق میں قائم بلاد ایئر بیس پر بدھ کی شام کو پانچ راکٹ داغے گئے تھے، عراقی سیکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ دو راکٹ جس علاقے میں گرے وہاں کوئی نقصان نہیں ہوا۔

اے ایف پی کے مطابق اس علاقے کو پہلے بھی متعدد بار راکٹ حملوں سے نشانہ بنایا گیا ہے، بغداد کے شمال میں واقع بلاد ایئر بیس پر سیلی پورٹ نامی امریکی کمپنی، عراق کے ایف 16 لڑاکا طیاروں کی دیکھ بھال اور مرمت کی خدمات انجام دیتی ہے۔

عراقی فوج اور سیکیورٹی ادارے کے عہدے دار نے بتایا کہ راکٹ بغداد انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر قائم ایک فوجی اڈے کے قریب بھی مارے گئے ہیں، راکٹ حملے کے باعث یہاں پر کام کرنے والی کمپنی کے کم از کم تین غیر ملکی اور ایک عراقی ملازم زخمی ہوا۔

اس کے علاوہ ایک راکٹ سے ایئر پورٹ کے اس علاقے کو نشانہ بنایا گیا جو امریکی فوجی طیاروں کے زیر استعمال رہتا ہے۔

عراقی حکام کا کہنا ہے کہ یہ راکٹ حملے ایسے ڈرون کے ذریعے کیے گئے ہیں جو ایران نواز گروپس کی جانب سے استعمال کیے جاتے ہیں، امریکا بھی عام طور پر ایسے حملوں کا الزام ایران کے حمایت یافتہ گروہوں پر لگاتا آ رہا ہے۔

خیال رہے کہ مذکورہ ایئر بیس پر کام کرنے والے ملازمین کو امریکی کمپنی ہیڈ مارٹن گزشتہ ماہ ہی سیکیورٹی خدشات کے باعث ہٹا چکی تھی۔ ان راکٹ حملوں کے ذریعے واشنگٹن پر اپنے باقی تمام اہل کاروں کو عراق سے واپس لے جانے کے لیے دباؤ ڈالنے کا حربہ بھی سمجھا جا رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں