site
stats
عالمی خبریں

روہنگیا مسلمان رات کی تاریکی میں نقل مکانی پرمجبور

ینگون : برما کے روہنگیا مسلمانوں کی بنگلہ دیش آمد کا سلسلہ جاری ہے، یہ مسلمان برمی فوج کے خوف سے رات کے اوقات میں چھپ کر سفر کررہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق برمی فوج اور بدھ انتہا پسندوں کے انسانیت سوز مظالم کے شکار روہنگیا مسلمانوں کیلئے ہجرت کرنا بھی کسی عذاب سے کم نہیں، مجبور اور بے بس افراد رات کی تاریکی میں چھپ کر سفر کرتے ہیں۔

بدھ انتہاپسندوں اوربرمی فوج کے بہیمانہ مظالم کا شکار ہونے والوں میں خواتین، بچے مرد،بوڑھے جوان سب ہی شامل ہیں، کسی کے کندھوں پرضعیف ماں توکوئی بیمارکو اٹھائے ہوئے محفوظ مقام کی جانب چلا جارہا ہے۔

برطانیہ کا کہنا ہے روہنگیا کا بحران ناقابل قبول سانحہ ہے، آنگ سانگ سوچی حکومت کوتشدد کا یہ رویہ ختم کرنا ہوگا، بےبسی اورکسمپرسی کی یہ تصویریں بھی عالمی ضمیرکو جنھجوڑنے میں تاحال ناکام ہیں۔


مزید پڑھیں: برمی فوجیوں کی روہنگیا خواتین سے زیادتی کا انکشاف


پناہ گزینوں کاکہنا ہے کہ بدھ انتہا پسندوں نے ہمارے گاؤں کو چاروں طرف سے گھیرا ہوا ہے، ہم نے جب گاؤں سے نکلنے کی کوشش کی تو انہوں نے بہت سارےلوگوں کو مار دیا، برمی فوج اور بدھ انتہا پسندوں کے خوف سے رات کی تاریکی میں سفرکرنے پر مجبور ہیں۔


مزید پڑھیں: روہنگیا مسلمانوں کے جلتے ہوئے گاؤں کی سٹیلائٹ تصاویرجاری


واضح رہے کہ فوج کی جانب سے روہنگیا مسلمانوں کے گاؤں کے گاؤں نذرآتش کئے جارہے ہیں لیکن امن کانوبل انعام لینے والی آنگ سانگ سوچی کواپنی حکومت اورفوج کے مظالم نظرنہیں آتے۔


روہنگیا مسلمانوں پر مظالم، 600 بستیاں، مدارس اور مساجد نذر آتش


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top