The news is by your side.

Advertisement

خادم حرمین شریفین کا بڑا فیصلہ، حج و عمرہ سیکٹر کے لئے خصوصی مراعات کا اعلان

ریاض: خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے کرونا وبا کے باعث حج و عمرہ سیکٹر کے متاثرہ افراد اور اداروں کے لیے خصوصی پیکج کی منظوری دی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ان اقدامات میں کئی شعبوں میں حجاج اور معتمرین کو سروسز فراہم کرنے والے اداروں اور افراد کو سالانہ فیسیں اور ٹیکسوں میں چھوٹ دینے کے اقدامات شامل ہیں، یہ سہولیات حج و عمرہ سروسز سے متعلق ان اداروں کو فراہم کی جا رہی ہیں جو عالمی وبا کرونا کی وجہ سے معاشی طور پر زیادہ متاثر ہوئے۔

حج اور عمرہ اداروں کو مراعاتی پیکج کرونا وبا سے زیادہ متاثر ہونے والے افراد کو معاشی سہولیات دینے کی حکومتی کوششوں کا حصہ ہے۔

خادم حرمین شریفین کی جانب سے دی جانے والی خصوصی رعایت

مکہ اور مدینہ میں زائرین کی رہائش پر لی جانے والی بلدیہ کی فیس میں ایک سال کا استثنی

حج اور عمرہ کمپنیوں میں کام کرنے والے تارکین کی فیس ’المقابل المالی‘ میں چھ ماہ کی چھوٹ

حج سیزن 1442ھ کےموقع پر سروسز فراہم کرنے والی نئی بسوں کی کسٹم ڈیوٹی تین ماہ کے لیے موخر، ساتھ ہی چار ماہ تک قسطوں میں ادائیگی کی اجازت۔

حج اور عمرہ اداروں سے وابستہ غیر ملکیوں کی اقامہ فیس 6 ماہ تک موخر کرنے کے ساتھ ساتھ انہیں ایک سال تک قسطوں میں فیس ادا کرنے کی سہولت

اس کے علاوہ وزارت سیاحت کے لیے ایک سال کی مدت تک مکہ اور مدینہ کے شہروں میں رہائش کی سہولیات کے لیے کسی فیس کے بغیر لائسنسوں کی تجدید کی جائے گی، اس مدت میں توسیع کی بھی جا سکتی ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب نے کرونا وبا کے منفی اثرات کا شکار ہونے والے اداروں کی بحالی کے لیے 150 سے زائد مراعاتی پیکیج کا اعلان کیا ہے جس کے لیے ایک کھرب 80 ارب ریال کی رقم مختص کی گئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں