The news is by your side.

روسی ماہرین کا اومیکرون کے حوالے سے دنیا سے بالکل مختلف بیان

ماسکو: روسی ماہرین نے کرونا وائرس کی نئی قِسم اومیکرون کے حوالے سے دنیا سے بالکل مختلف بیان جاری کیا ہے، ان کا کہنا ہے کہ نئی کرونا وائرس قِسم وبا کے خاتمے کی پہلی علامت ہے۔

تفصیلات کے مطابق روسی ماہرین نے نئے ویرینٹ اومیکرون کے سامنے آنے کو کرونا وبا کے خاتمے کی پہلی علامت قرار دے دیا ہے۔

روسی فیڈرل میڈیکل بائیولوجیکل ایجنسی کے متعدی امراض کے چیف ماہر ولادی میر نیکوفوروف کا کہنا ہے کہ کووِڈ 19 کے اومیکرون ویرینٹ کا پھوٹنا اس بات کا پہلا اشارہ ہو سکتا ہے کہ کرونا وبا اپنے خاتمے کے قریب ہے۔

اومیکرون نے خود کو بدلنے کے لیے عام نزلے کے وائرس کے ساتھ کیا کیا؟

وائرس کی نئی قِسم جس کی ابتدا جنوبی افریقا میں ہوئی اور جو زیادہ متعدی ہے، سے متعلق انھوں نے کہا کہ ہمارے پاس اعداد و شمار موجود ہیں جو اس بات کی نشان دہی کرتے ہیں کہ یہ وائرس کم خطرناک ہے اور اس وائرس سے متاثر ہونے کے بعد علامات انتہائی کم ہیں۔

ولادی میر نیکوفوروف نے کہا کہ یہ نیا ویرینٹ پھیپھڑوں کو شدید نقصان نہیں پہنچاتا، اور مجھے لگتا ہے کہ یہ اس ڈراؤنے خواب کے اختتام کا آغاز ہو سکتا ہے۔

وبائی امراض کے ماہر کا کہنا تھا کہ وہ اس ویرینٹ کو وبا کے خاتمے کی پہلی علامت کے طور پر دیکھتے ہیں، کیوں کہ وائرس کم ہونا شروع ہو گیا ہے۔

انھوں نے ایک اہم نکتہ یہ بھی بتایا کہ وائرس کی نئی قِسم کی وجہ سے کرونا وائرس ایک عام موسمی سانس کا انفیکشن بن سکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں