The news is by your side.

Advertisement

روس نے ٹویٹر کو بلاک کرنے کی دھمکی دے دی

ماسکو: روس نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر کو دھمکی دی ہے کہ اگر ممنوعہ مواد نہ ہٹایا گیا تو اسے بلاک کردیا جائے گا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق روس کے وفاقی ادارے کا کہنا ہے کہ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر کو ممنوعہ مواد ہٹانے اور بندش سے بچنے کے لیے ایک ماہ کی مہلت دی گئی ہے۔

روسی ادارے نے گزشتہ ہفتے ٹویٹر کی سروس میں یہ کہتے ہوئے خلل ڈالا تھا کہ امریکی پلیٹ فارم نے روس کی درخواستوں پر عمل نہیں کیا جن کی چائلڈ پورونو گرافی، منشیات کا استعمال اور بچوں کو خودکشی کی ترغیب دینے پر مشتمل مواد شامل تھا۔

روسی مانیٹر ادارے کے نائب سربراہ ویدم سبوٹن کا کہنا ہے کہ ’ہم ٹویٹر کو ایک ماہ کا وقت دے رہے ہیں اور اس دوران ممنوعہ مواد کے حوالے سے ویب سائٹ کا ردعمل دیکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اگر ویب سائٹ نے اس دوران عملدرآمد نہ کیا تو اس کو روس میں مکمل طور پر بند کردیا جائے گا۔

واضح رہے کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران روسی حکام نے مغربی میڈیا پلیٹ فارمز پر دباؤ بڑھایا ہے خصوصاً ان اداروں پر جو کریملن کو سپورٹ کرتے ہیں۔

روسی مانیٹرنگ ادارے کی جانب سے گذشتہ ہفتے کہا گیا تھا کہ اس نے ملک بھر میں تمام موبائل اور 50 فیصد ڈیسک ٹاپ استعمال کرنے والوں کے لیے ویب سائٹ کی اسپیڈ کم کر دی ہے۔

ٹویٹر ترجمان نے اس پر ردعمل دیتے ہوئے پچھلے ہفتے بتایا تھا کہ کمپنی کسی غیرقانونی رویے پر سپورٹ نہیں کرتی اور آن لائن عوامی رابطوں کی بندش پر شدید تحفظات رکھتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں