The news is by your side.

Advertisement

قذافی کے بیٹے کی سیاست میں آمد، صدارتی انتخاب لڑیں گے

تیونس: لیبیا کے سابق رہنما معمر قذافی بیٹے سیف الاسلام رواں سال ہونے والے صدارتی انتخابات میں حصہ لیں گے۔

لیبیا کی معروف جماعت پاپولر فرنٹ پارٹی کے ترجمان ایمن ابو راس نے تیونس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ صدارتی انتخابات کے لیے سیف الاسلام ان کی پارٹی کی طرف سے صدارتی امیدوار ہوں گے۔

پاپولر فرنٹ پارٹی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ صدارتی انتخاب میں کامیابی کے لیے بھرپور انتخابی مہم چلائی جائے گی جس کی تیاریوں کو حتمی شکل دی جارہی ہے۔

ترجمان پاپولر فرنٹ پارٹی نے سیف الاسلام کو موزوں امیدوار قرار دیتے ہوئے کہا کہ سابق صدر معمر قذافی کے صاحبزادے قومی مفاہمت اور ملک کی تعمیر و ترقی کے لیے سب کو ساتھ لے کر چلیں گے۔

یہ پڑھیں: معمرقذافی کےبیٹے سیف الاسلام کورہا کردیاگیا

واضح رہے کہ لیبیا کے سابق حکمران معمر قذافی کو بغاوت کے دوران 2011 میں قتل کردیا گیا تھا جبکہ ان کے بیٹے سیف الاسلام کو گرفتار کرلیا گیا تھا، دوران حراست انہیں پھانسی کی سزا سنائی گئی تھی تاہم کچھ عرصے بعد عام معافی کے اعلان کے تحت انہیں رہا کردیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ لیبیا کے سابق صدر معمر قذافی کے سات بیٹے تھے، برطانوی یونیورسٹی لندن اسکول آف اکنامکس سے تعلیم حاصل کرنے والے سیف الاسلام کو معمر قذافی کا جانشین تصویر کیا جاتا تھا۔

مبصرین کا خیال ہے کہ اگر سیف الاسلام انتخابات میں حصہ لیتے ہیں تو انہیں اپنے والد کی وراثت کا فائدہ حاصل ہوسکتا ہے کیونکہ لیبیا میں معمر قذافی کے بعد سے امن و امان کی صورتحال بہتر نہیں ہوسکی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں