The news is by your side.

وزیراعظم کے بیشتر مشیران اور معاونین اثاثوں کی تفصیلات ظاہر کرنے میں ناکام

اسلام آباد : وزیر اعظم کے بیشتر مشیران اور معاونین اپنے اثاثوں کی تفصیلات ظاہر نہ کرسکے، صرف 2 مشیران اور 4 معاونین خصوصی نے اثاثے ظاہر کئے۔

تفصیلات کے مطابق کابینہ سیکریٹریٹ کی ویب سائٹ پر بیشتر مشیران اور معاونین کے اثاثے موجود نہیں، ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم کے 4 مشیران میں سے صرف2 نے اثاثے ظاہر کئے۔

دستاویز میں قمر الزمان کائرہ اور امیر مقام نے اثاثے ظاہر کئے جبکہ وزیراعظم کے مشیران عون چوہدری اور سابق بیوروکریٹ احد چیمہ نے آن لائن پورٹل پر اثاثے ظاہر نہیں کئے۔

دستاویز کے مطابق 16معاونین خصوصی میں سے صرف 4 کے اثاثے ظاہر کئے گئے ہیں، اثاثے ظاہر کرنے والوں میں معاونین خصوصی میں طارق فاطمی، اور شزا خواجہ ، اویس صدیقی اور صادق افتخار شامل ہیں۔

رواں سال جون میں الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے 2021 کے لیے پارلیمنٹیرینز کے اثاثوں کی تفصیلات جاری کی تھیں ،جس میں بتایا گیا تھا کہ وزیراعظم شہباز شریف 24 کروڑ 50 لاکھ سے زائد اثاثوں کے مالک ہیں اور 14 کروڑ سے زائد کے مقروض ہیں۔

دستاویز میں کہا گیا تھا کہ شہباز شریف نے سلمان شہباز سے 6 کروڑ سے زائد کا قرض لےرکھا ہے جبکہ ان کے پاس 2گاڑیاں، بینک بیلنس 2 کروڑ سے زائد ہے۔

الیکشن کمیشن نے کہا تھا کہ شہباز شریف بیرون ملک 13 کروڑ 74 لاکھ روپے کے اثاثوں کے بھی مالک ہیں ، شہباز شریف کے اثاثوں میں 2020 کی نسبت 2021 میں3 لاکھ روپے کمی آئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں