سانحہ ماڈل ٹاؤن میں شہباز شریف کے حکم پر فائرنگ ہوئی، سردار لطیف کھوسہ lafteef khosa
The news is by your side.

Advertisement

سانحہ ماڈل ٹاؤن میں‌ فائرنگ شہباز شریف کے حکم پر ہوئی، لطیف کھوسہ

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کے رہنما اور سابق گورنر پنجاب سردار لطیف کھوسہ نے کہا ہے کہ شہباز شریف کےحکم پر ماڈل ٹاؤن میں لوگوں پر فائرنگ کی گئی، 14 لوگوں کو قتل کرنے کے بعد کسی کو بھی گرفتار نہیں کیا گیا، سانحہ ماڈل ٹاؤن پر پولیس اہلکار وعدہ معاف گواہ بننے کے لیے تیار ہیں۔

یہ بات انہوں نے اے آر وائی نیوز کے پروگرام الیونتھ آور میں بات چیت کرتے ہوئے کہ۔

سردار لطیف کھوسہ نے کہا کہ نواز شریف نے قومی دولت کو لوٹا، جمہوریت کو نقصان پہنچایا، پیپلز پارٹی آئین اور جمہوریت کے ساتھ کھڑی ہے، سیاست میں کوئی حتمی چیز نہیں ہوتی۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کا پورا خاندان 6 ماہ میں جیل میں ہوگا، نواز شریف اور ان کے خاندان سے کوئی بات نہیں کریں گے، کوئی نئی قیادت آئے گی تو دیکھیں گے۔

کروڑوں روپے کی پیشکش ہوئی لیکن لواحقین نہیں جھکے، عوامی تحریک

عوامی تحریک کے رہنما قاضی فیض الاسلام نے کہا کہ پاکستان عوامی تحریک کی جدوجہد جاری رہے گی،شہدا کو انصاف دلائے بغیر چین سے نہیں بیٹھیں گے، انصاف تک عوامی و قانونی جدوجہد جاری رہے گی۔


فیض الاسلام نے مزید کہا کہ حکمرانوں کی ایما پر 14 لوگوں کو قتل کیا گیا، شہدا کے لواحقین کو کروڑوں روپے کی پیشکش کی گئی، آئین اور قانون کے مطابق قصاص لیں گے۔

جسٹس باقر نے حکمرانوں کو ذمہ دار ٹھہرایا، پی ٹی آئی

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما محمود الرشید نے کہا کہ باقر نجفی کی رپورٹ میں انہیں ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے، حکمران باقر نجفی کی رپورٹ کو کیوں شائع نہیں کررہے؟ رانا ثنا اللہ کا اسمبلی میں دیا گیا بیان ریکارڈ پر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف اپنے اصولوں پر ہی الیکشن لڑے گی، میاں نواز شریف کی کشتی ڈوب چکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں