ہفتہ, مئی 18, 2024
اشتہار

سندھ کے وزیر تعلیم کی ’مشرف دور‘ میں قائم ہونے والے 7 ہزار اسکول بند کرنے کی سفارش

اشتہار

حیرت انگیز

کراچی: وزیر تعلیم سندھ سردار شاہ نے کہا ہے کہ صوبے میں 7 ہزار نان فنکشنل اسکول بند کرنے کی سفارش کی، جس کو غلط انداز سے پیش کیا گیا۔

وزیر تعلیم نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پانچ ہزار نا فنکشنل اسکولوں کو بند کرنے کا فیصلہ کیا، ان میں سے1400 ایسے اسکول ہیں جو کہ کئی سالوں سے خراب حالت کی وجہ سے بند ہیں جبکہ 3600 ایسے اسکول ہیں جو کہ ایک دو کمروں پر مشتمل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان اسکولوں کو مشرف دور میں تعمیر کیا گیا، جن کی اب ضرورت محسوس نہیں ہوتی کیونکہ ایک گاؤں میں صرف ایک کمرے میں چار چار اسکول تعمیر کیے گئے۔

- Advertisement -

سردار شاہ نے اسکولوں کی تعمیر کو اُس دور کا سیاسی فیصلہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ایک کمرے کے بنائے گئے اسکول صرف وہاں کے لوگوں کو خوش کرنے کے لئے تھے، اب وہ اسکول گاؤں کے وڈیرے کی اوطاق میں تبدیل ہو چکے ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ ان نان فکشنل اسکولوں میں زیادہ تعداد پرائمری اسکولوں کی ہے، جبکہ چند سیکنڈری اور الیمنٹری اسکول ہیں۔

سردار شاہ کا مزید کہنا تھا کہ ’ا ن اسکولوں میں تعینات اساتذہ کا کام کرنے کا دل نہیں چاہتا ہے اب ان سے کام لیں گے، کسی قریب کے فنکشنل اسکول میں ان کا تبادلہ کیا جائے گا‘۔

Comments

اہم ترین

انور خان
انور خان
انور خان اے آر وائی نیوز کراچی کے لیے صحت، تعلیم اور شہری مسائل پر مبنی خبریں دیتے ہیں

مزید خبریں