The news is by your side.

سعودی عرب کا مستقبل کے لیے بڑا فیصلہ

سعودی کابینہ نئے قومی بجٹ 2023 جاری کرنے کے لیے آئندہ چند روز کے دوران ہنگامی اجلاس منعقد کرے گی۔

سعودی اقتصادی ویب سائٹ ’مال‘ کے مطابق ہنگامی اجلاس بجٹ کے لیے خاص ہو گا۔

سعودی کے وزارتِ خزانہ نے بجٹ 2023 کے حوالے سے ابتدائی خاکہ اکتوبر 2022 میں جاری کیا تھا، جس کے مطابق آئندہ سال آمدنی کا تخمینہ 1.12 ٹریلین ریال اور اخراجات کا اندازہ 1114 ارب ریال کا ہے۔

مالیاتی تخمینے اس بات کا اشارہ دے رہے ہیں کہ 2022 کا بجٹ 90 ارب ریال زیادہ ہوگا البتہ 2023 میں فاضل رقم 9 ارب ریال رہے گی اور پھر 2024 کے بجٹ میں 21 ارب ریال زیادہ ہوں گے۔ اس کے بعد 2025 میں 71 ارب ریال حساب سے زیادہ رہیں گے۔

رواں سال 2022 سے لے کر 2025 تک 4 برس کے دوران آمدنی بچے گی، اگر تخمینے کے مطابق 4 سالوں کے دوران مبینہ اعدادوشمار کے تحت رقم بچتی رہی تو فاضل مجموعی رقم 2023 کے بجٹ کی آمدنی کا 26 فیصد ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں