The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: سفری پابندیوں کے خاتمے کے بعد ایک اور بڑی خبر آگئی

ریاض: سعودی حکومت کی جانب سے پاکستان سمیت دیگر ممالک پر عائد سفری پابندی کے خاتمے کے بعد قرنطینہ سے متعلق چند وضاحتیں سامنے آئی ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق مملکت کی وزارت داخلہ نے گزشتہ روز 6 ممالک(پاکستان، بھارت، مصر، انڈونیشیا، برازیل اور ویتنا) پر عائد براہ سفری پابندی کے خاتمے کا اعلان کیا اور بتایا کہ انہیں سعودی عرب آنے پر صرف پانچ دن کا قرنطینہ کرنا پڑے گا، مختلف شہرں میں خصوصی قرنطینہ سینٹرز قائم کیے گئے ہیں۔

سعودی شہر جدہ، ریاض، دمام الخبر اور ظھران میں قرنطینہ سینٹرز قائم کرنے کے لیے مختلف اداروں سے درخواستیں طلب کی گئی تھیں جس کے بعد سینٹرز کا قیام عمل میں آیا۔

مملکت آنے والوں کو 5 دن ہوٹل قرنطینہ کرنا ہوگا، مسافر ایئرپورٹ سے براہ راست ہوٹل قرنطینہ سینٹرز پہنچیں گے جہاں وزارت بلدیات کی جانب سے جاری ہدایات کے تحت مسافروں کو ٹھہرایا جائے گا۔

قرنطینہ کے آخری روز کورونا ٹیسٹ ہوگا اور رپورٹ منفی آنے کی صورت میں آئسولیشن ختم کردی جائے گی۔

اپنے ایک بیان میں سعودی وزارت داخلہ کا کہنا تھا کہ قرنطینہ سینٹرز میں 3 ہزار 276 افراد کے قیام کی گنجائش رکھی گئی ہے، سینٹرز میں تازہ ہوا کا بندوبست اور صفائی کا خصوصی خیال رکھا جائے گا۔

خیال رہے کہ سعودی عرب آنے والے مسافروں کو ایئرپورٹ سے عمارتوں میں پہنچانے کے لیے خصوصی ٹرانسپورٹ کا بندوبست قرنطینہ سینٹر کرے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں