The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : معمولی سی غلطی پر پورا خاندان کرونا وائرس میں مبتلا

ریاض: سعودی عرب میں کرونا وائرس کے خطرے اور سماجی فاصلے کے احکامات کے باوجود ایک خاندان نے فیملی گیدرنگ منعقد کی جس کے بعد خاندان کے 12 افراد کرونا وائرس میں مبتلا ہوگئے۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی عرب میں جان لیوا کرونا وائرس کا شکار ہونے والے سعودی نوجوان کا کہنا ہے کہ معمولی غلطی اور احتیاطی تدابیر پر عمل نہ کرنے کی پاداش میں 12 افراد پر مشتمل خاندان کرونا وائرس میں مبتلا ہوگیا۔

متاثرہ شخص نے سوشل میڈیا پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ لوگوں کو چاہیئے کہ متعلقہ اداروں کی جانب سے دی گئی احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کریں تاکہ اس مہلک بیماری سے بچ سکیں۔

اپنی پوسٹ میں نوجوان نے بتایا کہ حکومت کی جانب سے سماجی رابطے کو منقطع کرنے کی ہدایات پرعمل کرتے ہوئے تفریحی مقامات پر جانا چھوڑ دیا تاہم خاندان کے تمام افراد ایک جگہ جمع ہونا شروع ہوگئے، یہی ہماری بنیادی غلطی ثابت ہوئی جس کا خمیازہ کرونا کی شکل میں سامنے آیا،

مذکورہ شخص کا کہنا ہے کہ اکثر سعودی خاندانوں میں ہفتے میں ایک یا متعدد دنوں میں پورا خاندان ایک جگہ جمع ہوتا ہے اور یہی عادت ہماری بھی تھی، ہم سب اپنے دادا کے گھر جمع ہوئے اور فیملی گیدرنگ کے بعد سب اپنے اپنے گھروں کو چلے گئے کوئی یہ نہیں جانتا تھا کہ کس نے کس کو کرونا وائرس منتقل کر دیا ہے۔

اس کے مطابق خانگی اجتماع کے چند دن بعد ہی والدہ کو سانس میں تکلیف اور شدید بخار ہو گیا، جب ان کا ٹیسٹ کروایا گیا تو معلوم ہوا کہ وہ کرونا وائرس کا شکار ہوچکی ہیں۔

نوجوان کا کہنا تھا کہ یکے بعد دیگرے گھر کے 12 افراد پر اس وائرس نے حملہ کیا اور ہم سب کو قرنطینہ میں جانا پڑ گیا۔

اس نے مزید کہا کہ میری سب لوگوں سے درخواست ہے کہ ان دنوں خصوصی احتیاط برتیں اور خانگی اجتماعات بھی روک دیں کیونکہ اس طرح آپ دوسروں کو بھی محفوظ رکھ سکتے ہیں، خاص کر گھر کے بزرگوں کو جنہیں یہ وائرس بہت جلدی اپنی لپیٹ میں لے لیتا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں