The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس : سعودی حکومت کا اسکولوں سے متعلق اہم فیصلہ

ریاض : سعودی عرب میں کورونا وائرس کے تعلیمی سرگرمیوں پر تباہ کن اثرات کے باعث حکومت نجی اسکول مالکان کی پریشانیوں کو مد نظر رکھتے ہوئے ان کی مالی مدد کرنے پر غور کررہی ہے۔

سعودی عرب میں ریاض ایوان تجارت میں نجی تعلیمی کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر عبدالرحمان الحقبانی نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کی وبا کے باعث اس سال کے دوران ایک لاکھ سے زیادہ طلبہ و طالبات نجی اسکولوں سے نکل گئے ہیں۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق الحقبانی نے کہا ہے کہ ان طلبہ نے سرکاری اسکولوں میں داخلے لیے ہیں، ڈاکٹر عبدالرحمان الحقبانی نے ریاض ایوان تجارت میں نجی تعلیم کمیٹی کے زیر انتظام ورکشاپ کے دوارن کہا کہ موجودہ صورت حال میں نجی اسکول مشکل میں آگئے ہیں۔

ایک طرف تو ایک لاکھ سے زیادہ طلبہ نے داخلے ختم کرائے تو دوسری جانب ہزاروں طلبہ اسکولوں سے تعلیم مکمل کرکے نکل گئے اور ان کی جگہ نئے داخلہ نہیں ہوئے، دوسری جانب تعلیمی فیس ستر فیصد تک کم ہوگئی ہے جس سے سکول اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے سے قاصر ہیں۔

الحقبانی نے بتایا کہ نجی اسکولوں کو بحرانی حالات سے نکلنے کے لیے کئی تجاویز دی گئی ہیں، ان میں سے ایک تجویز یہ ہے کہ انہیں 5 ارب ریال تک کے قرضے دیے جائیں اور مقابل مالی فیس سے استثنٰی دیا جائے۔

انہوں نے مزید کہا کہ نجی اسکولوں کے قرضوں کی ری شیڈولنگ کی جائے۔ پہلی قسط کی وصولی وبا ختم ہونے کے چھ ماہ بعد وصول کی جائے۔

الحقبانی نے کہا کہ کمیٹی نے چار ورکنگ ٹیمیں تشکیل دی ہیں۔ ہر ایک کو درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے الگ الگ ٹاسک دیے گئے ہیں، ریاض ایوان تجارت میں نجی تعلیم کمیٹی کے زیرانتظام ورکشاپ میں کمیٹی کی حکمت عملی پر بحث بھی ہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں