The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: سرکاری ملازمین کے حوالے سے اہم ہدایات جاری

ریاض: سعودی حکام نے سرکاری اداروں کے ملازمین کے حوالے سے اہم ہدایات جاری کردیں، حکام کے بعد سرکاری ادارے کی نجکاری کے 2 برس تک کسی بھی ملازم کی تنخواہ میں کوئی کمی نہیں کی جا سکے گی۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود نے کہا ہے کہ کسی بھی سرکاری ادارے کی نجکاری کے بعد 2 برس تک ملازمین کی تنخواہوں میں کوئی رد و بدل نہیں ہوگا۔

وزارت افرادی قوت کا کہنا ہے کہ سرکاری ادارے کے جو ملازم نجکاری کے بعد نجی ادارے میں منتقل ہونے پر راضی نہیں ہوں گے انہیں کئی آپشن دیے جائیں گے۔

سیکریٹری وزارت افرادی قوت نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نجکاری کے 2 برس تک کسی بھی ملازم کی تنخواہ میں کوئی کمی نہیں کی جا سکے گی، البتہ 2 برس بعد ملازم کی تنخواہ میں کمی اور برطرفی کا اختیار ادارے کو حاصل ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ممکن ہے کہ ملازمت کے نئے معاہدے میں نجی ادارہ تنخواہ میں اضافہ کردے اور یہ بھی ممکن ہے کہ وہ کم تنخواہ کی بات کرے۔

سیکریٹری وزارت کا مزید کہنا تھا کہ اگر 2 سال تک ملازم نے عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا تو اس کی ملازمت برقرار رہے گی، اس کا بھی امکان ہے کہ تنخواہ میں اضافہ ہوجائے۔ اس کا دار و مدار ملازم کی اپنی کارکردگی پر ہے۔

وزارت افرادی قوت نے اطمینان دلایا کہ اگر ملازمین کسی بڑی کوتاہی کا مظاہرہ نہیں کریں گے تو ان کی ملازمت جاری رہے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں