The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: غیر ملکیوں کے لیے کرونا علاج سے متعلق بڑی خبر

ریاض: سعودی حکومت کا کہنا ہے کہ کرونا کے مفت علاج کے لیے اقامے کی ضرورت نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق سعودی محکمہ پاسپورٹ نے شہریوں اور غیرملکیوں سے کہا کہ جو شخص بھی کرونا کی علامات محسوس کرے فوراََ مفت علاج کے لیے قریب ترین سرکاری یا نجی اسپتال کا رخ کرے۔

محکمہ پاسپورٹ نے واضح کیا کہ کوئی بھی غیر ملکی جس کے پاس اقامہ ہو یا نہ ہو اسے اسپتال میں اقامہ پیش کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔

سعودی محکمہ پاسپورٹ کے مطابق اگر کوئی شخص غیر قانونی طریقے سے رہ رہا ہے وہ بھی کرونا کی علامات محسوس کرتے ہی سرکاری یا نجی اسپتال پہنچ جائے اس کا مفت علاج کیا جائے گا، اسے علاج کے لیے اقامہ پیش نہیں کرنا پڑے گا۔

سعودی عرب میں غیرملکیوں اور اقامہ رکھنے والوں کے لیے خصوصی سہولتیں

دوسری جانب سعودی عرب میں وزارت افرادی قوت وسماجی بہبود غیرملکیوں اور ایکسپائر اقامہ رکھنے والوں کو وطن واپسی کے لیے مزید سہولتیں فراہم کر رہی ہے۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق ایسے غیرملکی جن کے اقامے ایکسپائر ہوچکے ہیں اور تجدید نہیں کرائے گئے وہ بھی وطن واپسی کے لیے خصوصی اقدامات کے تحت مزید سہولتوں سے مستفید ہوسکیں گے۔

کرونا وائرس: سعودی عرب کے سرکاری اسپتالوں میں 80 ہزار بیڈ مختص

یاد رہےکہ یکم اپریل کو سعودی محکمہ صحت کا کہنا تھا کہ سرکاری اسپتالوں میں 80 ہزار سے زائد بیڈ کرونا وائرس کے مریضوں کے علاج کے لیے مختص کیے گئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں