The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : ذخیرہ اندوزوں کیخلاف ریکارڈ چھاپہ مار کارروائیاں

ریاض : سعودی حکومت مملکت میں مہنگائی کی روک تھام کیلئے کوشاں ہے اس سلسے میں حکام نے مختلف علاقوں میں مؤثر کارروائیاں کیں اور تاجروں پر زائد قیمتوں کے وصول کرنے پر جرمانے عائد کیے ہیں۔

اس حوالے سے سعودی وزیر تجارت نے کہا ہے کہ صارفین کا تحفظ ریاست کی انتہائی اولین ترجیح ہے، سعودی خبر رساں ایجنسی کے مطابق وزیر تجارت اور قائم مقام وزیر اطلاعات ماجد القصبی نے جمعرات کو پریس کانفرنس کی۔

اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے پیدا ہونے والے اقتصادی مسائل سے تاجروں کو ناجائز فائدہ اٹھانے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور تاجروں کو قیمتیں بڑھانے سے روکا جائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ وزارت تجارت نے مملکت بھر میں اشیاء کی زائد قیمتوں کی شکایت پر تین لاکھ 70 ہزار چھاپے مار کر37 ہزار خلاف ورزیاں ریکارڈ کی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ چھاپوں کے دوران انکشاف ہوا کہ بعض تاجروں نے کھانے پینے کی اشیاء ذخیرہ کر رکھی تھیں جس پر پانچ سو ٹن غذائی اشیا ضبط کرلی گئیں۔

وزیر تجارت نے بتایا کہ مذکورہ تاجروں کی جانب سے25 ملین ماسک، سیناٹائزر اور 280 ٹن چاول مہنگا بیچنے کے لیے گوداموں میں چھپا دیا گیا تھا، وزارت نے یہ سارا سامان تحویل میں لے کر مارکیٹوں میں سپلائی کروا دیا ہے۔

انہو ں نے مزید کہا کہ سعودی حکومت نے غذائی اشیاء ذخیرہ کرنے پر خلاف ورزی کا جرمانہ 10 لاکھ درہم تک کردیا ہے تاکہ ذخیرہ اندوزوں کو سبق سکھایا جا سکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں