The news is by your side.

Advertisement

کون سی مہندی استعمال کی جاسکتی ہے، سعودی حکومت کی خواتین کو ہدایت

ریاض : سعودی حکومت نے خواتین کو متنبہ کیا ہے کہ وہ پانچ اقسام کی مہندی ہرگز استعمال نہ کریں، یہ مہندیاں ہاتھوں کی جلد کے لیے بے حد نقصان دہ اور مہلک ہیں۔

سعودی فوڈ اینڈ ڈرگز اتھارٹی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ پانچ اقسام کی مہندی کے استعمال سے پرہیز کریں۔ سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق ایس ایف ڈی اے کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ بازاروں میں موجود مہندی کے مختلف نمونے لے کر لیبارٹری بھیجے گئے تھے۔

نمونوں کے معائنہ سے معلوم ہوا کہ ان میں سے پانچ قسم کی مہندیاں ایسی ہیں جن میں بیکٹریا اور فنگس کی مقدار متعین کردہ حد سے زیادہ ہے۔

ان میں سے پہلی مہندی جس کا نام حنا المراسم ، دوسری عطارہ حنا الکتم ، تیسری حنا التاج ، چوتھی الدامر فیمیس حنا ہے جبکہ پانچویں واٹس ایپ حنا ہے۔

ایس ایف ڈی اے نے توجہ دلائی کہ آرائش و زیبائشی اشیا میں بیکٹریا خاص مقدار میں باوجوہ ملائی جاتی ہے۔

اس حوالے سے دو پابندیاں لگی ہوئی ہیں پہلی یہ کہ محدود مقدار سے زیادہ نہ ہو دوسری پابندی یہ ہے کہ بیکٹریا نقصان دہ نہ ہو جبکہ اس کی پابندی نہ کرنے کی صورت میں صارف کی صحت متاثر ہوتی ہے۔

ایس ایف ڈی اے نے صارفین سے کہا ہے کہ وہ مذکورہ پانچوں قسموں میں سے کسی بھی قسم کی مہندی استعمال نہ کریں، ان کے یہاں ان قسموں میں سے کسی ایک بھی قسم کی مہندی ہو تو اس سے چھٹکارہ حاصل کرلیں۔

ایس ایف ڈی اے نے تنبیہ کی ہے کہ سعودی بازاروں سے مذکورہ پانچوں قسم کی مہندی اٹھانے کا حکم دے دیا گیا ہے اور یہ ہدایت بھی کر دی گئی ہے کہ آئندہ اس قسم کی مہندی درآمد نہ کی جائے بصورت دیگر خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف متعلقہ اداروں کے تعاون سے تادیبی کارروائی کی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں