The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب : نئے قوانین نافذ، سزاؤں کا اعلان

ریاض : سعودی مملکت کے ماہر قانون عاصم الملا نے کہا ہے کہ اجتماعی جھگڑا اور مارپیٹ قابل سزا جرم ہے،3 سے چھ ماہ تک قید کی سزا ہوسکتی ہے۔

مقامی عربی روزنامہ کے مطابق ماہر قانون عاصم الملا نے مزید کہا کہ اجتماعی جھگڑے کے علاوہ قانون ہاتھ میں لینے کی اضافی سزا ایک ماہ سے لے کر ایک برس تک قید ہے۔

انہوں نے کہا کہ اجتماعی جھگڑا کرنے والوں پر اسلحہ کی نمائش اور اس کے استعمال کی سزا بھی لاگو کی جاسکتی ہے، قانون کے مطابق اجتماعی جھگڑے کے دوران اسلحہ استعمال کرنے پر 10 برس قید کی سزا ہے۔

Saudi Arabia arrests hundreds in its latest corruption crackdown |  Corruption News | Al Jazeera

الملا نے مزید کہا کہ اجتماعی جھگڑے میں کسی فریق نے دوسرے کوکسی بھی نوعیت کا نقصان پہنچایا ہو تو اس صورت میں فیصلہ مقدمے کی کاروائی کے بعد کیا جائے گا۔

دوسری جانب پبلک پراسیکیوشن کے عہدے دار نے کہا ہے کہ فوجداری قانون کی دفعہ15 اور17 کے بموجب اجتماعی مارپیٹ میں شریک افراد کی گرفتاری ضروری ہے، سعودی قانون کے بموجب اجتماعی جھگڑا سنگین جرائم میں شامل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں