The news is by your side.

Advertisement

سعودی حکومت کا بڑا فیصلہ، شاہی فرمان جاری

ریاض : سعودی حکومت نے تعلیمی سرگرمیوں سے متعلق عوام کو متنبہ کیا ہے کہ اسکول، کالجز اور یونیورسٹیوں میں آن لائن تعلیم کا سلسہ جاری رہے گا۔

اس حوالے سے وزیر تعلیم ڈاکٹر حمد آل الشیخ نے گذشتہ روز اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ پہلا تعلیمی سمسٹر آخر تک آن لائن ہوگا اور اس فیصلے کا شاہی فرمان بھی جاری ہوگیا ہے۔

سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق سعودی عرب میں نئے تعلیمی سال کی شروعات آن لائن کی گئی تھی، پرائمری، مڈل و ثانوی اسکولوں، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں تعلیم آن لائن ہورہی ہے۔

ٹیکنالوجی ٹریننگ کے انسٹی ٹیوٹ اور سینٹرز میں بھی یہی سلسلہ چل رہا ہے البتہ پریکٹیکل کے لیے طلبہ و طالبات کو کالجوں، انسٹی ٹیوٹ اور سینٹرز میں حاضری دینا پڑتی ہے۔

ڈاکٹر حمد آل الشیخ نے بتایا کہ سعودی قیادت طلبہ و طالبات کو نئے کورونا وائرس سے بچانے کے لیے پرعزم ہے اسی لیے ہر مرحلے کی تعلیم آن لائن کی جارہی ہے۔

وزیر تعلیم نے بتایا کہ حالیہ ہفتوں کے دوران مملکت بھر میں کورونا وائرس کی صورتحال کا گہرائی سے جائزہ لے کر ایوان شاہی نے حکم دیا ہے کہ پہلے تعلیمی سمسٹر کا باقی ماندہ حصہ بھی آن لائن رکھا جائے۔

الشرق الاوسط کے مطابق وزیر تعلیم نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ آن لائن تعلیم کے دوران طلبہ کی کارکردگی کو بہتر بنانے والی سکیمیں تیار کی گئی ہیں، آن لائن تعلیم کے نتائج جاننے کے لیے بعض مضامین میں طلبہ کا امتحان لیا جائے گا۔

وزیر تعلیم نے کہا ہے کہ تمام سماجی ادارے آن لائن تعلیم کے سلسلے میں وزارت کے ساتھ بھرپور تعاون کریں, اس حقیقت کو مدنظر رکھیں کہ مستقبل کا سٹراٹیجک راستہ آن لائن تعلیم ہی کا ہے۔

ضروری ہوگیا ہے کہ آن لائن تعلیم کے نظام کو جدید تر بنایا جائے اور واقعات و بحرانوں سے بالا ہوکر آن لائن تعلیم کا کلچر رائج کیا جائے، موجودہ مرحلہ تبدیلی کا زریں موقع ہے، ہمیں اس سے فائدہ اٹھانا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں