The news is by your side.

Advertisement

سعودی حکومت نے سرحدیں کھولنے کا اعلان کردیا، بڑی پابندی ختم

ریاض : سعودی عرب میں شہریوں کے لیے بیرون ملک سفر پر عائد پابندی ختم کردی گئی ہے، ویکسی نیشن کرانے والے شہریوں کو سفر کی اجازت ہوگی۔

اس حوالے سے سعودی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ پیر17 مئی 2021 سے سعودی عرب کے ایئر پورٹس، بندرگاہیں اور بری سرحدی چوکیاں شہریوں کے لیے کھول دی جائیں گی۔ عمل درآمد اتوار اور پیر کی درمیانی شب ایک بجے سے ہوگا۔

سعودی خبررساں ادارے کے مطابق وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ 17 مئی سے سعودی شہریوں کے بیرون مملکت سفر پر عائد پابندی ختم کردی گئی ہے۔ بیان میں مزید کہا گیا کہ ان افراد کو سفر کی اجازت دی گئی ہے جنہوں نے ویکسین کی دو خوراکیں لگوائیں یا سفر سے کم از کم دو ہفتے قبل ایک

خوراک لگوائی یا وہ جو گزشتہ چھ مہینے کے دوران کورونا سے صحتیاب ہوئے یا جن کی عمر 18 سال سے کم ہے۔

یاد رہے کہ کورونا وائرس کے کیسز میں مسلسل اضافے کے پیش نظر ایئرپورٹس، بندرگاہوں اور بری سرحدی چوکیوں سے آمد و رفت کے حوالے سے مکمل سفری پابندیوں کے خاتمے کی تاریخ میں توسیع کی گئی تھی۔

وزارت داخلہ نے کہا تھا کہ 31 مارچ کے بجائے17 مئی 2021 سے سفری پابندیاں ختم کی جائیں گی۔

بیان میں وزارت داخلہ کے عہدیدار نے کہا کہ 29 جنوری 2021 کو کہا گیا تھا کہ 17 مئی 2021 سے بری سرحدی چوکیاں، بندرگاہیں اور ایئر پورٹس کھول دیے جائیں گے اور سعودی شہریوں پر بیرون مملکت سفر پرعائد پابندی اٹھالی جائے گی۔

سعودی صحت حکام کی رپورٹ پر 17 مئی 2021 سے شہریوں کے سفر پر عائد پابندی اٹھانے کی منظوری دی گئی ہے اس سے جو زمرے پابندی سے مستفیض ہوں گے ان کی بیان میں تفصیلات دی گئی ہیں۔

وہ سعودی شہری جو کوویڈ 19 ویکسین کی دونوں خوراکیں لے چکے ہوں۔ اسی طرح وہ شہری جو ویکسین کی ایک خوراک لے چکے ہوں اور پہلی خوراک پر 14 دن گزر چکے ہوں اور توکلنا ایپ پر یہ ریکارڈ آرہا ہو۔

سعودی عرب واپسی پر سات دن ہاؤس آئسولیشن کی پابندی کرنا ہوگی۔ علاوہ ازیں آئسولیشن کے آخر میں پی سی آر ٹیسٹ رپورٹ بھی دینا ہوگی پی سی آر ٹیسٹ سے 8 سال سے کم عمر کے بچے مستثنی ہوں گے۔ اس سہولت کے تحت وہ سعودی شہری بھی سفر کرسکیں گے جو کورونا وائرس سے صحت یاب ہوچکے ہوں۔

اٹھارہ برس کے شہریوں کو اس کے تحت سفر کی مشروط اجازت ہوگی ۔ سفر سے قبل سعودی سینٹرل بینک ساما سے منظور شدہ ہیلتھ انشورنس کرانا ہوگی، اس میں بیرون مملکت کووڈ 19 کا علاج شامل ہو۔

یہ لوگ سعودی عرب واپس ہوں گے تو انہیں سات دن ہاؤس آئسولیشن میں رہنا ہوگا۔ آئسولیشن کی میعاد مکمل ہونے پر پی سی آر ٹیسٹ کرانا ہوگا اس سے 8 سال کے بچے مستثنی ہوں گے۔

وزارت داخلہ کے عہدیدار نے ہدایت کی کہ تمام لوگ کورونا ایس او پیز اور وبا سے بچاؤ کی تدابیر کی سختی سے پابندی کریں۔ صحت ضوابط پر عمل درآمد میں لاپروائی نہ برتیں۔ سماجی فاصلے کی پابندی کریں۔ ماسک پہنیں اور ہاتھ پابندی سے دھوتے رہیں۔

وزارت داخلہ کے عہدیدار نے کہا کہ کورونا سے متعلق سفری ایس او پیز کاجائزہ اور نظر ثانی کا سلسہ متعلقہ ادارے جاری رکھیں گے۔

وزارت داخلہ نے مسافروں کو تاکید کی کہ وہ دیگر ممالک کی مقرر کردہ پابندیوں کا خیال کریں تاکہ کسی دشواری میں نہ پڑیں۔ انتہائی متاثرہ ممالک کا سفر کرتے وقت تمام ضروری تدابیر کرلیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں